یمن پر سعودی عرب کی تازہ بمباری میں مزید 89 افراد شہید و زخمی

یمن کے دارالحکومت صنعا میں سعودی عرب کی تازہ وحشیانہ بمباری میں 9 افراد شہید اور 80 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں سعودی عرب نے ان حملوں میں سابق صدر علی عبد اللہ صالح کے رشتہ داروں کے رہائشی علاقہ بیت میعاد کو نشانہ بنایا ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے المیادین کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ یمن کے دارالحکومت صنعا میں سعودی عرب کی تازہ وحشیانہ بمباری میں 9 افراد شہید اور 80 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں سعودی عرب  نے ان حملوں میں سابق صدر علی عبد اللہ صالح کے رشتہ داروں کے رہائشی علاقہ بیت میعاد کو نشانہ بنایا ہے ۔اطلاعات کے مطابق سعودی جنگی جہازوں  نے سابق یمنی صدر علی عبداللہ صالح اور ان کے عزیز و اقارب کے رہائشی علاقے بیت میعاد کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں 9 افراد شہید اور 80 زخمی ہوگئے، زخمیوں کو صنعا کے قریبی اسپتالوں میں منتقل کردیا گیا ہے جن میں سے بعض افراد کی حالت تشویشناک ہے ذرائع کے مطابق سعودی عرب نے فضائی حملوں میں یمن کے اسکولوں ، مساجد ،اسپتالوں اور رہائشی علاقوں کو تباہ کردیا ہے سعودی عرب نے ظلم و بربریت میں اسرائیل کا ریکارڈ توڑ دیا ہے بھیناک ظلم و ستم کے باوجود سعودی عرب اپنے کسی سیای ہدف تک نہیں پہنچا سکا اور سعودی عرب کی وحشیانہ بمباری کو عالمی سطح پر بزدلانہ کارروائی قراردیا جارہا ہے۔

News Code 1855821

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 0 =