سعودی عرب میں مسجدوں پر حملے میں ملوث 6 افراد کی تصویریں جاری

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے قطیف اور دمام میں شیعہ مساجد امام علی (ع) اور امام حسین(ع) پر حملوں میں ملوث 16 مشتبہ سلفی وہابی دہشت گردوں کی تصاویر جاری کردی ہیں جبکہ تمام دہشت گردوں کا تعلق سعودی عرب سے ہی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العہد کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب کی  وزارت داخلہ نے قطیف اور دمام میں شیعہ مساجد  امام علی (ع) اور امام حسین(ع) پر حملوں میں ملوث 16 مشتبہ سلفی وہابی دہشت گردوں کی تصاویر جاری کردی ہیں جبکہ تمام دہشت گردوں کا تعلق سعودی عرب سے ہی ہے۔اطلاعات کے مطابق وزارت داخلہ نے گزشتہ ہفتے مشرقی شہر دمام اوراس سے قبل القطیف میں 2 مساجد پرحملوں میں ملوث 16 مشتبہ مقامی افراد کی تصاویرجاری کردیں جب کہ ملزمان سے متعلق اطلاع دینے والوں کے لیے 2 لاکھ 70 ہزارڈالرانعام کا بھی اعلان کیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ نے اعلان کیا ہے کہ مسلح دہشت گردوں کے حملے کو ناکام بنانے میں کسی بھی قسم کی معاونت کرنے والے کو 19 لاکھ ڈالرانعام دیا جائے گا۔مساجد پر حملوں میں ملوث مطلوب افراد میں سعید الراشد، فیصل الزہرانی، سویلم الراویلی، ابراہیم الوزن، عبدالہادی الکوہتانی، عبدالرحیم المطلق، احمد الغامدی، محمد الزوہرانی، ہشام الخدیر، حسن الشمیری، سلطان الشوہری، محسن العتیبی، بسام الحیحی، عبدالرحمان الشوہری، محمد الاونزی اور حسن الکوہتانی شامل ہیں۔ واضح رہے کہ 22 مئی کو سعودی عرب کے شہر القطیف کی امام علی (ع)مسجد میں خود کش حملے میں 21 افراد شہید جب کہ 29 مئی کو دمام کی امام حسین(ع) مسجد کے قریب ہونے والے خود کش حملے میں 4 افراد شہید  ہوئے تھے۔

News Code 1855586

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =