محمد بن سلمان پاکستان کا دورہ کریں گے/شہباز حکومت کی مکمل حمایت کا اعادہ

ولی عہد کے دورے میں پاکستان کو 4.2ارب ڈالرز اضافی بیل آؤٹ پیکیج ملنےکی توقع ہے جبکہ گوادرمیں 10 ارب ڈالرزسے آئل ریفائنری کیلئے سعودی عرب چین سے مل کر مدد کرے گا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی میڈیا سے نقل کیاہےکہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان رواں ماہ پاکستان کادورہ کریں گے۔ولی عہد کے دورے میں پاکستان کو 4.2ارب ڈالرز اضافی بیل آؤٹ پیکیج ملنےکی توقع ہے جبکہ گوادرمیں 10 ارب ڈالرزسے آئل ریفائنری کیلئے سعودی عرب چین سے مل کر مدد کرے گا۔

مقامی ذرائع کے مطابق محمد بن سلمان کا نومبر کے تیسرے ہفتے میں دورہ پاکستان متوقع ہے اور ان کے 21نومبر کو دورہ پاکستان کا امکان ہے۔سفارتی ذرائع نے بتایا کہ رواں ہفتے کے آخر میں سعودی خصوصی سکیورٹی ٹیم پاکستان پہنچے گی اور سکیورٹی انتظامات کا حتمی جائزہ لے گی۔

پاکستانی ذرائع کا کہنا ہے کہ ولی عہد کے دورے میں پاکستان کو 4.2 ارب ڈالرز اضافی بیل آؤٹ پیکج ملنےکی توقع ہے جبکہ دورے میں سعودی عرب کی پاکستان میں مضبوط سرمایہ کاری متوقع ہے اور متعدد پاک سعودی پیٹرولیم معاہدوں کو آخری شکل دی جا رہی ہے۔

پاکستانی ذرائع کے مطابق سعودی عرب کی جانب سے پیٹرولیم کے شعبے میں آئل ریفائنری کے قیام پر معاہدہ بھی متوقع ہے۔سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی عرب گوادر میں جدید آئل ریفائنری کے قیام میں مدد کریگا، گوادر میں10ارب ڈالرزسے آئل ریفائنری کیلئے سعودی عرب چین سے مل کر مدد کرے گا اور چینی کمپنیاں منصوبےکی تکمیل کےبعدابتدائی طورپرریفائنری چلائیں گی۔

پاکستانی ذرائع کے مطابق غیر یقینی سیاسی صورتحال میں مزیدخرابی سعودی ولی عہد کے دورے میں رکاوٹ پیداکرسکتی ہے۔

News Code 1913050

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha