شمالی اور جنوبی کوریا کے فوجیوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ

شمالی اور جنوبی کوریا کی افواج میں 2017 کے بعد پہلی بار فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی  نے ایسو سی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہشمالی اور جنوبی کوریا کی افواج میں 2017 کے بعد پہلی بار فائرنگ کا تبادلہ  ہوا ہے۔ سیئول کے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ شمالی کوریا کے فوجیوں نے سرحدی زون کے اندر جنوبی کوریائی گارڈ چوکی پر متعدد گولیاں چلائیں۔ ۔ انہوں نے بتایا کہ جنوبی کوریا نے انتباہی نشریات جاری کرنے سے قبل دو مواقع پر کل 20 راؤنڈ وارننگ شاٹس کے ساتھ جواب دیا تھا۔انہوں نے کہا کہ جنوبی کوریا کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔دفاعی عہدے داروں کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کے بھی کسی بھی فوجی کے جانی نقصان کا امکان نہیں ہے کیوں کہ جنوبی کوریا کے انتباہی شاٹس شمالی کوریا کے علاقے پر غیر آباد علاقوں پر چلائے گئے تھے۔اطلاعات کے مطابق اتوار کا واقعہ مستقل تناؤ کی ایک یاد دہانی ہے تاہم اس میں دونوں اطراف سے کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا ہے اور یہ امکان نہیں ہے کہ مبینہ طور پر اس سے کشیدگی میں اضافہ ہوگا۔

News Code 1899893

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =