ایرانی سرحدوں پر بدامنی پھیلانے کی اجازت نہیں دیں گے/دوحہ مذاکرات ناکام

اسلامی جمہوریہ ایران کی سپاہ قدس کے سربراہ جنرل قاآنی نے ایرانی پارلیمنٹ کے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایران کی سرحدوں پر بدامنی پھیلانے کی اجازت نہیں دیں گے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ایرانی پارلیمنٹ کے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے رکن ابراہیم رضائی نے مہر کے نامہ نگار کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کی سرحدوں پر بدامنی پھیلانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ ابراہیم رضائی نے جنرل قاآنی کے حوالے سے کہا کہ ایران کی علاقائي صورتحال پر گہری اور قریبی نظر ہے ہم نے افغانستان کی موجودہ صورتحال میں بہترین مؤقف اختیار کیا ہے۔ انھوں نے کہا جنرل قاآنی نے افغانستان میں امریکہ کی شکست اور نقصانات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے 2 ہزار ارب ڈالر سے زائد رقم افغانستان میں صرف کی اور 10 ہزار امریکی فوجی افغانستان میں مارے گئے اور اتنا بڑا سرمایہ خرچ کرنے کے باوجود امریکہ کو افغانستان میں شکست ہوگئی۔

ایرانی پارلیمنٹ کی قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے رکن نے جنرل قاآنی کے حوالے سے کہا کہ امریکہ نے ایران، چين ، روس اور ہندوستان پر تسلط قائم کرنے کے لئے افغانستان پر قبضہ کیا لیکن اسے اس منصوبہ میں شکست ہوگئی اور آخر کار امریکہ افغانستان سے فرار ہوگیا۔ انھوں نے کہا کہ امریکہ کی مداخلت کی وجہ سے دوحہ میں بین الافغان مذاکرات ناکام ہوگئے۔

News Code 1908074

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 6 =