امریکی صدر کا ایران کی طرف سے یورینیم کی افزودگی پر رد عمل

امریکی صدر ٹرمپ نے ایران کی طرف سے یورینیم کی افزودگی پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران آگ سے کھیل رہا ہے اور اس پر اقتصادی دباؤ برقرار رہے گا ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے ایران کی طرف سے یورینیم کی افزودگی پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران آگ سے کھیل رہا ہے اور اس پر اقتصادی دباؤ برقرار رہے گا ۔

امریکی صدر نے وائٹ ہاؤس میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایران جانتا ہے کہ وہ کیا کام کررہا ہے ، ایران جانتا ہے کہ وہ آگ سے کھیل رہا ہے۔لہذا  میں کسی صورت میں ایران کے نام کوئی پیغام نہیں دوں گا۔۔

اس سے قبل وائٹ ہاؤس کے ترجمان نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روشنی ميں ایران کو یورینیم افزودہ کرنے کی اجازت دینا غلطی تھی ۔ واضح رہے کہ ایران نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روشنی ميں یورینیم کی افزودگی کی مقدار کو 300 کلو کی حد سے پار کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ادھر روس کا کہنا ہے کہ  ایرانی اقدامات کا سبب امریکہ ہے جس نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کو نقض کیا اور ایران کے خلاف دوبارہ پابندیاں عائد کیں۔

News Code 1891816

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 8 =