انسانی ہمدردی کی بنیاد پر افغان عوام کی سب کو مدد کرنی چاہیے، ایم ڈبلیو ایم پاکستان

علامہ مقصود علی ڈومکی نے افغانستان میں تباہ کن زلزلے میں ایک ہزار سے زائد قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمسایہ برادر اسلامی ملک افغانستان کے مظلوم عوام کی وسیع پیمانے پر ہلاکت افسوسناک ہے۔

مہر نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری تنظیم علامہ مقصود علی ڈومکی نے افغانستان میں تباہ کن زلزلے میں ایک ہزار سے زائد قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمسایہ برادر اسلامی ملک افغانستان کے مظلوم عوام کی وسیع پیمانے پر ہلاکت افسوسناک ہے۔ افغان عوام جو پہلے ہی مصائب وآلام اور مشکلات کا شکار ہے وہاں تباہ کن زلزلے کے نتیجے میں وسیع پیمانے پر انسانی جانوں کا ضیاع ہوا ہے اور ہزاروں مکانات منہدم ہوئے ہیں۔ امت مسلمہ کو یہ درد محسوس کرنا چاہیے کیونکہ مسلمان جسد واحد کی طرح ہیں۔ ایک ہزار سے زائد افراد کی ہلاکت بہت بڑا انسانی المیہ ہے۔ اقوام عالم اور عالمی اداروں کو چاہئے کہ وہ مظلوم افغانستان کے متاثرین کی مدد کے لئے آگے آئیں۔
انہوں نے کہا کہ اقوام عالم سے کٹی ہوئی موجودہ افغان حکومت عوام کی مشکلات حل نہیں کرسکتی لہذا انسانی ہمدردی کی بنیاد پر افغان عوام کی سب کو مدد کرنی چاہیے۔
انہوں نے کہا کہ جنگ زدہ افغانستان کے عوام پہلے ھی بھوک اور افلاس سے مر رہے ہیں اور عالمی ادارے کی رپورٹ کے مطابق افغانستان کی نصف آبادی کو خوراک کی شدید کمی کا سامنا ہے۔ حالیہ زلزلے سے بھوک و عوامی مشکلات میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔

News Code 1911306

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 15 =