پاکستانی سپریم کورٹ کے فیصلے کے اثرات پاکستان کے مستقبل پر مرتب ہونگے

پاکستان کے ممتاز عالم دین اور قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی پاکستان کی موجودہ سیاسی صورتحال کے بارے میں ایک بیان میںآئین کی بالا دستی پر تاکید کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام نظریں عدالت عظمیٰ پرلگي ہوئی ہیں ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے ممتاز عالم دین اور قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی پاکستان کی موجودہ سیاسی صورتحال کے بارے میں ایک بیان میںآئین کی بالا دستی پر تاکید کرتے ہوئے کہا ہے کہ  تمام نظریں عدالت عظمیٰ پرلگي ہوئی ہیں ۔

قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کہتے ہیں آج ملک کو ایک آئینی بحران نے جکڑا ہوا ہے جسے حل نہ کیاگیا تو یہ شدید سے شدید ترین اوربد سے بد ترین ہوتا ہوجائےگا، ایسی صورت میں جبکہ ہر کوئی اپنے اندا ز میں آئین کا سہارا لے رہا ہے پورے عوام باالخصوص سنجیدہ فکر طبقات کی نظریں سپریم کورٹ پرلگی ہوئی ہیں۔ عدالت عظمیٰ کا اس حوالے سے فیصلہ تاریخی اہمیت کا حامل ہوگا ، اس فیصلے کے حال کے ساتھ مستقبل پر بھی اثرات مرتب ہونگے اور یہ فیصلہ آئین کی بالادستی کے لئے ایک مثال و اصول بن جائےگا۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان نے آخر میں کہاکہ مستقبل کے حکمرانوں کو ملک کے تمام مسائل کا حل آئین کی بالادستی، قانون کی حکمرانی اور انصاف کی یکساں فراہمی کی روشنی میں تلاش کرنا ہوگا ۔

News Code 1910407

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha