غزہ میں فلسطینی شہداء کی تعداد 202 تک پہنچ گئی / غزہ سے اسرائیل پر 2900 میزائلوں سے حملہ

غزہ پر اسرائیل کی وحشیانہ بمباری کا سلسلہ جاری ہے اسرائیلی جنگی طیاروں کی غزہ پر بمباری کے نتیجے میں اب تک 202فلسطینی شہید ہوگئے ہیں جن میں 53 بچے اور 31 خواتین بھی شامل ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق غزہ پر اسرائیل کی وحشیانہ بمباری کا سلسلہ جاری ہے اسرائیلی جنگی طیاروں کی غزہ پر بمباری کے نتیجے میں اب تک 202فلسطینی شہید ہوگئے ہیں جن میں 53 بچے اور 31 خواتین بھی شامل ہیں۔۔ اسرائيل اور فلسطینیوں کے درمیان پیر کے دن اس وقت جھڑپیں شروع ہوئیں جب اسرائیلی فوج نے مسجد الاقصی میں فلسطینی نمازیوں پر حملہ کردیا تھا۔

غزہ میں طبی اہلکاروں کا کہنا ہے کہ غزہ پر اسرائیل کی وحشیانہ بمباری کے نتیجے میں اب تک 202 فلسطینی شہید ہوگئے ہیں جن میں 53  بچے اور 31 خواتین بھی شامل ہیں۔ اطلاعات کے مطابق غزہ کی مرکزی سڑک الوحدہ پر اسرائیل کے تازہ ترین حملےميں 26 افراد شہید ہوگئے ہیں جن میں 10 خواتین اور 8 بچے شامل ہیں۔ اسرائیلی جنگی طیارے غزہ میں رہائشی عمارتوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔ ادھر فلسطینی مزاحمتی تنظیموں نے بھی اب تک اسرائیل پر 2900 میزائل داغے ہیں۔ فلسطینی تنظیم قسام بریگیڈ نے یحیی عیاش کے نام پر عیاش 250 میزائل کی رونمائی کی ہے جبکہ جہاد اسلامی تنظیم کے عسکری ونگ سرایا القدس نے بھی شہید میجر جنرل قاسم سلیمانی کے نام پر " قاسم " میزائل کی رونمائی کی اور ان دونوں میزائلوں سے مقبوضہ فلسطینی علاقوں پر حملہ کیا ہے۔

اس سے قبل اسرائیلی جنگی طیاروں نے غزہ میں عالمی میڈیا ہاؤس  کی بلند عمارت پر بمباری کرکے تباہ کردیا تھا۔

اطلاعات کے مطابق اس عمارت میں  الجزیرہ اور ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی)  سمیت دیگر بین الاقوامی میڈیا کے دفاتر بھی تباہ ہوگئے جو اسرائیلی فوج کی غزہ میں میڈیا کو خاموش کرنےکی بدترین کوشش ہے۔

ذرائع کے مطابق الجلا ٹاور کے مالک نے میڈیا کو اسرائیلی حملے کے حوالے سے پہلے ہی خبردار کردیا تھا اور عمارت کو خالی کردیا گیا تھا۔ الجزیرہ میں جاری کی گئیں ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ 12 منزلہ عمارت کارروائی کے بعد لمحوں میں تباہ ہورہی ہے اور آسمان کی جانب دھواں بلند ہورہا ہے۔

News Code 1906540

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 15 =