چین اور کینیڈا کے درمیان ٹی شرٹ کشیدگی کا باعث بن گیا

چین اور کینیڈا کے درمیان صرف ایک ٹی شرٹ پر پیدا ہونے والا تنازع دونوں ممالک کے تعلقات میں کشیدگی کا باعث بن گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نےغیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ چین اور کینیڈا کے درمیان صرف ایک ٹی شرٹ پر پیدا ہونے والا تنازع دونوں ممالک  کے تعلقات میں کشیدگی کا باعث بن گیا ہے۔  

اطلاعات  کے مطابق چین  نے بیجنگ میں کینیڈا کے سفارت خانے کے عملے میں شامل ایک ملازم کی جانب سے  ایک ایسی ٹی شرٹ آرڈر پر منگوانے کی وجہ سے باقاعدہ احتجاج کیا ہے جس پر کورونا وائرس کے حوالے سے  چین کو دوش دینے کا تاثر ملتا ہے اورچینی حکام کے مطابق اس ٹی شرٹ کے ذریعہ  وبا کے مقابلے میں چینی اقدامات کا مذاق اُڑایا گیا ہے۔

منگل کو چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کینیڈا کی حکومت پر واضح کردیا ہے کہ وہ اس معاملے کی فوری تحقیقات کرکے ہمیں اس کے نتائج سے آگاہ کرے۔

اس تنازع کا آغاز اس طرح ہوا کہ چین کے سوشل میڈیا پر ایک تصویر گردش کرنے لگی جس میں دکھایا گیا کہ کینیڈا کے سفارتی عملے میں شامل ایک شخص ایسی ٹی شرٹ آرڈر کررہا ہے جس پر چمگادڑ بنا ہوا ہے۔ اس تصویر کو کورونا وائرس کے ووہان سے آغاز کے بارے میں اس تھیوری کی جانب اشارہ سمجھا گیا کہ وہاں جانوروں کی ایک مارکیٹ میں فروخت ہونے والے چمگادڑوں سے یہ وائرس دنیا بھر میں پھیل گیا۔

تاہم کینیڈا کے میڈیا نے وضاحت کی ہے کہ ٹی شرٹ پر چمگادڑ کی شکل نہیں بلکہ انگریزی حرف تہجی ڈبلیو لکھا ہوا ہے جو کہ نیویارک کے ایک ہپ پاپ گروپ " وو تانگ"  کا نشان ہے۔

News Code 1905095

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 0 =