سعودی عرب میں اب خواتین ٹیچرز طلبا کو پڑھا سکیں گی

سعودی عرب میں اب خواتین ٹیچرز بھی طلبا کو پڑھا سکیں گی اس سے قبل خواتین اساتذہ صرف طالبات کو ہی درس دیتی تھیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العربیہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب میں اب خواتین ٹیچرز بھی طلبا کو پڑھا سکیں گی اس سے قبل خواتین اساتذہ صرف طالبات کو ہی درس دیتی تھیں۔ اطلاعات کے مطابق سعودی وزارت تعلیم نے کہا ہے کہ  ملک بھر میں 14 ہزار 60 سرکاری اسکولوں میں اب خواتین اساتذہ طلبا کو بھی تعلیم دے سکیں گی۔ طلبا کی ابتدائی سیشن میں 4 سے 5 سال اور بعد ازاں 6 سے 8 سالہ طلبا ہوں گے جنہیں خواتین ٹیچر تعلیم دیں گی۔ ذرائع کے مطابق سعودی عرب کے ولیعہد اب وہابی نظریات میں بڑے پیمانے پر تبدیلی لا رہے ہیں ۔ولی عہد محمد بن سلمان نے امریکی اشاروں پر سعودی عرب میں کئی نمایاں تبدیلیاں ایجاد کی ہیں، خواتین کو گاڑی چلانے کے علاوہ ملازمتوں اور اکیلے سفر کرنے کی اجازت بھی مل گئی ہے جب کہ ثقافتی طائفوں کی آمد اور سینما ہال بھی کھولے جا رہے ہیں۔

News Code 1893438

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 6 =