برطانوی وزير اعظم سے استعفی کا مطالبہ

پانامہ لیکس میں برطانوی وزیراعظم کی جانب سے آف شور کمپنی کے ذریعے مالی فوائد حاصل کرنے کے معاملے پر اپوزیشن نے ڈیوڈ کیمرون سے استعفے کا مطالبہ کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پانامہ لیکس میں برطانوی وزیراعظم کی جانب سے آف شور کمپنی کے ذریعے مالی فوائد حاصل کرنے کے معاملے پر اپوزیشن نے ڈیوڈ کیمرون سے استعفے کا مطالبہ کردیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق لیبر پارٹی سے تعلق رکھنے والے اپوزیشن رہنما جرمی کاربن نے آف شور کمپنی کے ذریعے مالی فوائد حاصل کرنے کے معاملے پر وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون سے استعفے کا مطالبہ کردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون عوام کا اعتماد کھو چکے ہیں کیونکہ انھوں نے آف شور کمپنی کا معاملہ کئی برسوں تک چھپائے رکھا۔ جرمی کاربن نے مزید کہا کہ آف شور کمپنی کے معاملے پر ڈیوڈ کیمرون نے عوام کو گمراہ کیا اس لئے لیبر پارٹی ٹین ڈاؤننگ اسٹریٹ کے سامنے احتجاج کرے گی، ڈیوڈ کیمرون آف شور کمپنی کا معاملہ پارلیمنٹ میں لائیں اور تمام معاملات واضح کریں۔ دوسری جانب ترجمان ٹین اسٹریٹ کا کہنا ہے کہ ڈیوڈ کیمرون نے قانون کے مطابق تمام چیزیں ظاہر کی تھیں۔ واضح رہے کہ چند روز قبل پانامہ لیکس نے دنیا بھر کے حکمرانوں، سیاستدانوں اور دیگر شخصیات کی جانب سے خفیہ طریقے سے دولت بنانے اور ٹیکس چھپانے کے لئے آف شور کمپنیوں سے متعلق ایک کروڑ 10 دستاویزات جاری کی تھیں جس میں برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون کا نام بھی شامل تھا۔

News Code 1863174

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 8 =