امریکہ کی 23 ریاستوں کا شامی پناہ گزینوں کو پناہ دینے سے انکار

پیرس میں حالیہ حملوں کے بعد امریکہ کی 23 ریاستوں نے شامی پناہ گزینوں کو پناہ دینے سے انکار کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پیرس میں حالیہ حملوں کے بعد امریکہ کی 23 ریاستوں نے شامی پناہ گزینوں کو پناہ دینے سے انکار کردیا ہے۔ امریکہ کی 23 ریاستوں کے گورنرز نے اعلان کیا ہے کہ دہشت گری کے خدشے کے پیش نظر شامی پناہ گزینوں کو اپنی ریاستوں میں پناہ نہیں دی جائے گی۔ ریاستی گورنروں نے پیرس خودکش حملے میں ملوث مشکوک  حملہ آور کے قریب سے ملنے والے شامی پاسپورٹ کو بنیاد بنا کرکہا ہے کہ پیرس حملوں میں مبینہ طورپرشامی لوگ ملوث ہیں اس لئے پناہ گزینوں کو اپنی ریاستوں میں جگہ نہیں دے سکتے۔ جن ریاستوں نے شامی پناہ گزینوں کو پناہ دینے سے انکار کیا ان میں ٹیکساس، جورجیا، اوہائیو، فلوریڈا، انڈیانا، الباما، آریزونا، شمالی کیرولینا، لوسیانا، مشی گن، آرکنساس اور دیگر شامل ہیں جب کہ ٹیکساس کے گورنر گریگ ایبٹ نے صدر اوبامہ کو واضح خط لکھا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ان کی ریاست شامی پناہ گزینوں کو پناہ دینے کے پروگرام میں شرکت نہیں کرے گی اورپیرس حملوں کے بعد اس کی ہرگز اجازت نہیں دی جاسکتی جب کہ ریاست آرکنساس کے گورنر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ ان کی ریاست میں شامی پناہ گزینوں کو جگہ دینے کی شدید مخالفت کی جائے گی۔ دوسری جانب امریکی نائب صدر جوبائڈن نے شامی پناہ گزینوں کو پناہ نہ دینے کی شدید مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر امریکہ نے شامی متاثرین کو پناہ نہ دی تو یہ داعش کی فتح ہوگی اور ہم داعش کو کامیاب ہونے نہیں دیں گے۔

News Code 1859654

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 0 =