ایران کا ترکی اور شام کے درمیان مصالحتی کردار ادا کرنے کا اعلان

اقوام متحدہ میں ایران کے نمائندے نے کہا ہے کہ ایران ، ترکی اور شام کے درمیان اختلاف کو حل کرنے کے لیے ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں ایران کے نمائندے مجید تخت روانچی نے کہا ہے کہ ایران ، ترکی اور شام کے درمیان اختلاف کو حل کرنے کے لیے ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔ اطلاعات کے مطابق میجد تخت روانچی نے اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کے اجلاس میں کہا کہ " ادلب میں پیشرفت سے متعلق دمشق اور انقرہ کے درمیان اختلافات ختم کرانے کے لیے ایران ہر ممکن کوشش کرنے کو تیار ہے" ۔

انہوں نے کہا کہ " خطے کی صورتحال تشویشناک ہے، اس لیے ہمیں اس تنازع کو ہاتھ سے نکل جانے سے قبل حل کرنے کی کوشش کرنی چاہیے" ۔ ادلب کی صورتحال پر سوچی معاہدے پر روشنی ڈالتے ہوئے مججد تخت روانچی کا کہنا تھا کہ 'آستانہ اجلاس میں میں اس معاہدے پر روشنی ڈالی گئی تھی۔'

گزشتہ روز دمشق نے ادلب میں ترکی کی فوج کی تعیناتی اور شام میں اسرائیل کی حالیہ فضائی بمباری کی مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ انقرہ اور تل ابیب کے درمیان شام کے خلاف اتحاد جاری ہے اور دونوں ممالک شام میں سرگرم غیر ملکی دہشت گردوں کی حمایت کررہے ہیں۔ ادھر اسرائیلی وزير اعظم نے بھی ترک صدر کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر چہ اردوغان میرے خلاف دھمکی آمیز زبان استعمال کرتے رہتے ہیں لیکن وہ اسرائیل کے ساتھ اقتصادی تعاون کو مضبوط بنار ہے ہیں۔

News Code 1897657

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 13 =