ہم صحیح وکیل کو کیسے منتخب کریں؟

شاید اکثر افراد کے لئے صحیح اور مناسب وکیل کا انتخاب کوئی اہم مسئلہ نہ ہو لیکن تجربہ سے ثابت ہوا ہے کہ انسانی زندگی میں بعض ایسے تاریک مراحل آتے ہیں جن میں ایک ماہر اور تجربہ کار وکیل کا حضور بہت ضروری ہوتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایرانی وکلاء اینفو کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ شاید اکثر افراد کے لئے صحیح اور مناسب وکیل کا انتخاب کوئی اہم مسئلہ نہ ہو لیکن تجربہ سے ثابت ہوا ہے کہ انسانی زندگی میں بعض ایسے تاریک  مراحل آتے ہیں جن میں ایک ماہر اور تجربہ کار وکیل کا حضور بہت ضروری ہوتا ہے۔

چاہے انسان کسی جرم کا ارتکاب کرے یا نہ کرے بہر صورت مدعی اور شاکی کی صورت ميں بھی انسان کو ماہر  اور تجربہ کار وکیل کی ضرورت ہوتی ہے۔

پہلا قدم :

انسان کو اپنے وکیل کی قانونی صلاحیت کے بارے میں اچھی خاصی معلومات اور اطلاعات ہونی چاہیے اور اس سلسلے میں وکلاء کی سائٹ  کی طرف رجوع کرکے وکلاء کی قانونی صلاحیت کے بارے میں اطمینان حاصل کرنا چاہیے۔

دوسرا قدم :

اپنے مقدمات کی پیروی کے لئے بااخلاق وکیل کا انتخاب کرنا چاہیے  کیونکہ دیگر تمام شعبوں اور اداروں کی طرح  وکلاء میں بھی بعض غلط افراد موجود ہوتے ہیں جن کا کام اپنے مؤکل سے صرف رقم وصول کرنا ہوتا ہے۔

۔تیسرا قدم :

اپنے دوستوں اور ساتھیوں کے ذریعہ مشہور ، معروف، تجربہ کار ، قانون مدار اور با اخلاق وکلاء کا انتخاب کرنا چاہیے کیونکہ بعض وکلاء خود غیر قانونی امور کا ارتکاب کرتے ہیں۔

چوتھا قدم :

جیسا کہ پہلے بھی بیان کیا جاچکا ہے کہ وکالت کے لئے علم و دانش کے علاوہ تجربہ بھی بہت ضروری ہے لہذا ایسے وکیل کی طرف رجوع کرنا چاہیے جو آپ کے مقدمہ کی پیروی کرنے میں اچھی خاصی مہارت اور  تجربہ رکھتا ہو۔

پانچواں قدم :

وکالت نامہ پر دستخط کرنے سے پہلے اس بات کا خاص خیال رکھیں کہ آپ اپنے وکیل کو کون سے اختیارات سونپ رہے ہیں۔

چھٹا قدم:

اگر آپ اپنے وکیل کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہیں تو آپ کو اس سلسلے میں عدالت میں موجود وکلاء کی انجمن میں شکایت درج کرانی چاہیے ، کیونکہ اس صورت ميں آپ کی فیس واپس کرائی جاسکتی ہے۔

News Code 1879921

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 12 =