پنجاب کی مختلف جیلوں میں8 قیدیوں کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا

پاکستان کے صوبہ پنجاب کی مختلف جیلوں میں سزائے موت کے منتظر 8 قیدیوں کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے صوبہ پنجاب کی مختلف جیلوں میں سزائے موت کے منتظر 8 قیدیوں کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق بہاولپور کی نیوسینٹرل جیل میں قتل کے 3 مجرموں غلام قادر ،غلام سرور اور تھانیدار کو پھانسی دے دی گئی۔ غلام قادر اورغلام سرور نے 2002 میں خاتون سمیت 2 افراد کو قتل کیا تھا جبکہ تھانیدارعرف تِھندو نے2001 میں اپنی بیوی سمیت 2 افراد کو قتل کیا تھا۔ملتان سینٹرل جیل میں محمد شفیع اور اکرم نامی مجرموں کو تختہ دار پر چڑھا دیا گیا، محمد شفیع نے1992میں ڈکیتی کے دوران مزاحمت پر اسلم نامی شخص کو قتل کیا تھا جب کہ اکرم نے زمین کے تنازع پر ماجد نامی شخص کو قتل کیا تھا۔ ڈسٹرکٹ جیل گجرات میں اسلم اور اعظم نامی 2 مجرموں کو پھانسی دیدی گئی دونوں مجرموں نے1999 میں معمولی تنازع پر اپنے قریبی عزیز کو قتل کیا تھا۔ ڈسٹرکٹ جیل اٹک میں 2003 میں باپ بیٹے کو قتل کرنے والے مجرم محمد اشرف کو پھانسی دے دی۔ پاکستان میں پھانسیاں نجی اور ذاتی جھگڑوں میں ملوث مجرموں کو دی جاررہی ہیں جبکہ پھانسی پر سے پابندی وہابی دہشت گردوں کو کیفر کردار تک پہنچنے کے لئے اٹھائی گئی تھی ۔

News Code 1858823

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 8 =