پیغمبر اسلام (ص) کیسے فکر کرتے تھے

پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم جب گھر سے باہر تشریف لاتے تھے تو خراب شدہ گھروں اور دیواروں کو دیکھ کر فکر کرتے اور سوچتے تھے کہ ان گھروں اور دیواروں کے اندر رہنے والے اور ان کو بنانے والے کہاں گئے؟

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق حسن بن صیقل کی روایت میں وارد ہوا ہے کہ ایک دن میں نے حضرت امام جعفر صادق علیہ السلام سے سوال کیا " قلت (لابى عبدالله): كيف يتفكر؟ کہ پیغمبر اسلام (ص) کیسے سوچتے اور فکر کرتے تھے؟ حضرت نے فرمایا: « قال: يمر بالدار والخربه، فيقول: أين بانوك؟ أين ساكنوك؟ ما لك لا تتكلمين" . پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم جب گھر سے باہر تشریف لاتے تھے تو خراب شدہ گھروں اور دیواروں کو دیکھ کر فکر کرتے اور سوچتے تھے کہ ان گھروں اور دیواروں کے اندر رہنے والے اور ان کو بنانے والے لوگ کہاں گئے؟ ان کی تمنائیں اور آرزوئیں کہاں گئیں ؟ وہ لوگ کہاں چلے گئے قبر نے ان کے ساتھ کیا کیا؟۔

News Code 1855699

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha