غیر ملکی زائرین شلمچہ باڈر پر نہ جائیں، حتمی اعلان کا انتظار کریں، سربراہ اربعین کمیٹی ایران

ایران کی مرکزی اربعین کمیٹی کے سربراہ نے کہا کہ ابھی تک پاکستانی اور افغانی زائرین کا مسئلہ حل نہیں ہوا اور ہم انہیں تاکید کرتے ہیں کہ کسی بھی طور پر شلمچہ کے باڈر پر نہ جائیں۔ 

مہر خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، ایران کی اربعین کمیٹی کے سربراہ سید مجید میر احمدی سرحدوں سے زائرین کے گزرنے کے حوالے سے تازہ ترین اپڈیٹس کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اب تک ۸ لاکھ ۵۰ ہزار افراد زمینی سرحدوں سے گزر کر عراق جا چکے ہیں جبکہ پاکستانی اور افغانی زائرین کا مسئلہ ابھی تک حل نہیں ہوا اور ہم انہیں تاکید کرتے ہیں کہ کسی بھی طور پر شلمچہ کے باڈر پر نہ جائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ تخمینوں کے مطابق آج رات ١۲ بجے تک باڈر پار کرنے والے زائرین کی تعداد گزشتہ دن مقابلے میں ١۰۰ فیصد تک بڑھ جائے گی۔  

ان کا کہنا تھا کہ سرحدی نقاط پر اہل سنت برادران نے بھی موکب لگائے ہیں اور شیعہ اور اہل سنت کے مابین اتحاد کا عملی مظاہرہ ہو رہا ہے۔ 

اربعین کمیٹی کے سربراہ نے ایران کے زمینی باڈرز سے غیرملکی زائرین کے عبور کی تازہ ترین اپڈیٹیس کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ابھی تک پاکستانی اور افغانی زائرین کا مسئلہ حل نہیں ہوا لہذا یہ افراد باڈر کی طرف جانے سے پرہیز کریں تاہم اس سلسلے میں کوششیں جاری ہیں اور بات چیت ہو رہی ہے لہذا غیر ملکی زائرین مسئلہ حل ہونے کے اعلان تک منتظر رہیں۔

News Code 1912284

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha