سعودی عرب حکومت  نے " بن لادن گروپ " کا انتظامی کنٹرول سنبھال لیا

سعودی عرب نے " بن لادن گروپ " کے چیئرمین اور اس خاندان کے دیگر افراد کوکرپشن کے الزامات میں گرفتار کرنے کے بعد اس گروپ کا انتظامی کنٹرول سنبھال لیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب نے " بن لادن گروپ " کے چیئرمین اور اس خاندان کے دیگر افراد کوکرپشن کے الزامات میں گرفتار کرنے کے بعد اس گروپ کا انتظامی کنٹرول سنبھال لیا ہے۔ بن لادن گروپ جو اپنے عروج کے دور میں 1 لاکھ سے زائد ملازم رکھتا تھا، وہ سعودی عرب کا سب سے بڑا تعمیراتی گروپ ہے اور ریاض کے بڑے ریئل اسٹیٹ، صنعتی اور سیاحتی منصوبوں کے ذریعے معیشت کو بہتر کرنے میں خاص اہمیت رکھتا ہے۔ تاہم یہ گروپ گزشہ کچھ سالوں سے معاشی طور پر مشکلات کا شکار ہے، جس کی وجہ تعمیراتی صنعت کا بحران اور 2015 میں مکہ مکرمہ میں کرین گرنے سے 107 افراد کی اموات کے بعد نئے ریاستی معاہدوں کی عارضی طور پر معطلی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے گزشتہ برس اکتوبر میں کرپشن کے خلاف کریک ڈاؤن میں سینئر حکام اور تاجروں کو حراست میں لیا گیا تھا، جس میں بن لادن گروپ کے چیئرمین بقر بن لادن اور خاندان کے کئی اور افراد بھی شامل تھے۔ ذرائع کے مطابق بن لادن خاندان کے افراد کی گرفتاری کے بعد، وزارتِ خزانہ کی جانب سے 5 رکنی کمیٹی بنائی گئی، جس میں تین حکومتی ارکان بھی شامل تھے، تاکہ وہ بن لادن گروپ کے کاروبار کو دیکھ سکیں اور سپلائرز اور ٹھیکیداروں کے ساتھ تعلقات کو سنبھال سکیں۔ سعودی عرب کی حکومت نے بن لادن گروپ کا کنٹرول اب اپنے ہاتھ میں لے لیا ہے۔

News Code 1877993

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 9 =