فلپائن میں سعودی عرب کے وہابی مبلغ، وہابی دہشت گردوں کی فائرنگ میں زخمی/2 ساتھی ہلاک

سعودی عرب کے وہابی مبلغ، متنازعہ اسکالر اور وہابی دہشت گردوں کے حامی الشیخ عائض بن عبداللہ القرنی فلپائن میں فائرنگ کے ایک واقعہ میں شدید زخمی ہو گئے ہیں جبکہ ان کے دو ساتھیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب کے وہابی مبلغ اور وہابی دہشت گردوں کے حامی الشیخ عائض بن عبداللہ القرنی فلپائن میں فائرنگ کے ایک واقعہ میں شدید زخمی ہو گئے ہیں جبکہ ان کے دو ساتھیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔ سعودی عرب کے وہابی مفتیوں نے ہمیشہ وہابی دہشت گردوں کی سیاسی، سماجی اور اقتصادی سطح پر مدد کی ۔ اطلاعات کے مطابق سعودی عرب کے مبلغ اور متنازعہ اسکالر الشیخ عائض بن عبداللہ القرنی زانبوآنگا شہر میں لیکچر دے کر فارغ ہوئے تھےکہ نامعلوم حملہ آوروں نے ان پر حملہ کر دیا ۔ڈاکٹر عائض القرنی کو شدید زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ ان کے 2 ساتھی ہلاک ہوگئے ہیں۔عرب ذرائع کے مطابق سعودی عرب کے مبلغ اسلام، دین، قرآن ، نماز اور جہاد کے مقدس ناموں پر عالم اسلام میں دہشت گردی کو فروغ دیتے ہیں۔ سعودی عرب کے مبلغ اور مفتی خود ابوسفیان، معاویہ  اور کفار قریش کے نقش قدم پر گامزن ہیں۔ سعودی عرب خود بڑے شیطان امیرکہ کا اتحادی ہے سعودی حکام کو خود اسلام کے دائرے میں لانے کی ضرورت ہے سعودی عرب پر حکمراں خاندان در حقیقت شیطانی اور ابوسفیانی خاندان ہے اور اس خاندان سے حرمین شریفین کو آزاد کرانا ہر مسلمان کا فرض ہے آل سعود اور سعودی عرب کے ڈکٹیٹر بادشاہ حرمین شریفین کی حرمت کو پامال کررہے ہیں۔ سعودی عرب اسلام کی آڑ میں اسلام اور مسلمانوں کی پشت میں خنجر گھونپ رہا ہے۔

News Code 1862238

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha