سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان اپنے بھائی کے قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے

سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کے بھائي بندر بن سلمان نے شاہی گارڈ کے افسر کو ولیعہد محمد بن سلمان کو قتل کرنے کے لئے 10 ملین ریال دیئے تھے لیکن محمد بن سلمان نے اپنے بھائی کے قاتلانہ حملے کوناکام بنادیا ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صہیونی اخبار مکور ریشون نے فاش کیا ہے کہ سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کے بھائي بندر بن سلمان نے شاہی گارڈ کے افسر کو ولیعہد محمد بن سلمان کو قتل کرنے کے لئے 10 ملین ریال دیئے تھے، لیکن سعودی ولیعہد محمد بن سلمان نے اپنے بھائی کے قاتلانہ حملے کوناکام بنادیا ۔ صہیونی اخبـار کے مطابق محمد بن سلمان قاتلانہ حملے میں بچ گئے۔ مختلف ذرائع کے مطابق بھائی کے قاتلانہ حملے کو ناکام  بنانے کے بعد ولیعہد محمد بن سلمان نے اپنے بھائی بندر بن سلمان کو گرفتار کرلیا ہے۔ صہیونی اخبار کے مطابق  بندر بن سلمان نے شاہی گارڈ کے ایک افسر کو ولیعہد محمد بن سلمان کو قتل کرنے کے لئے 10 ملین ریال دیئے تھے ، اس کا مطلب یہ ہے کہ سعودی عرب کے شاہی خاندان میں کسی بھی وقت قبائلی جنگ شروع ہوسکتی ہے۔ محمد بن سلمان نے شاہی گارڈ کے افسر اور بھائی دونوں کو گرفتار کرنے کے بعد اپنی سکیورٹی میں اضافہ کردیا ہے۔ سعودی عرب میں ولیعہد محمد بن سلمان کے خلاف  بیشمار لوگ ہیں جن میں بڑی تعداد میں سعودی شہزادے بھی شامل ہیں۔

News Code 1909871

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha