ایرانی عوام کی انتخابات میں تاریخی، بےمثال اور ولولہ انگیز شرکت ایران کی سربلندی کا مظہر

اسلامی جمہوریہ ایران کے تیرہویں صدارتی انتخابات، چھٹے شہری اور دیہی کونسلوں کے انتخابات ، خبرگان کونسل اور پارلیمنٹ کے بعض علاقوں میں ضمنی انتخابات میں ایرانی عوام کی بھر پور، تاریخی ، بےمثال اور ولولہ انگیز شرکت ایران کی قوت اور سربلندی کا مظہر ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی اردو سروس کے مطابق اسلامی جمہویرہ ایران کے تمام  صوبوں، شہروں، قصبوں اور دیہاتوں میں پولنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ لمبی لمبی قطاروں میں لوگ اپنا ووٹ ڈالنے کے لئے کھڑے ہیں۔ اسلامی جمہوریہ ایران کے تیرہویں صدارتی انتخابات، چھٹے شہری اور دیہی کونسلوں کے انتخابات ، خبرگان کونسل اور پارلیمنٹ کے بعض علاقوں میں ضمنی انتخابات میں  ایرانی عوام کی بھر پور،  تاریخی ، بےمثال اور ولولہ انگیز شرکت ایران کی قوت اور سربلندی کا مظہر ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے تیرہویں صدارتی انتخابات میں آج صبح سات بجے اپنا ووٹ حسینیہ امام خمینی (رہ) میں موبائل بیلٹ بکس نمبر 110 میں ڈالنے کے بعد فرمایا: انتخابات کا دن ایرانی عوام کا دن ہے۔ آج عوام اپنا ووٹ استعمال کرکے اپنی مرضی کے مطابق اپنا صدر منتخب کریں گے ۔ آج کا دن عوام سے متعلق ہے۔ انتخابات کا میدان ایرانی عوام کے ہاتھ میں ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے الیکشن کمیشن کے مرکزی دفتر کے دورے کے دوران اپنا ووٹ کاسٹ کرتے ہوئے کہا کہ صدارتی انتخابات بہت ہی اہم ہیں۔ ایرانی عوام کی انتخابات میں بڑے پیمانے پر شرکت ایران کی طاقت اور قدرت کا مظہر ہے۔

ایران و ایرانی برنده آزمون بزرگ/ «۲۸ خرداد» جشن ملی شد

صدر روحانی نے کہا کہ تمام پولنگ اسٹیشنوں پر طبی پروٹوکول کی رعایت کے ساتھ ووٹنگ کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکرمحمد باقر قالیباف نے نے بھی اپنا ووٹ ڈالنے تہران کی جامع مسجد ابوذر میں کاسٹ کرتے ہوئے صدارتی انتخابات کو اہم قراردیا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران سمیت تمام چھوٹے و بڑے شہروں، قصبوں اور دیہاتوں میں تیرہویں صدارتی انتخابات کے سلسلے میں ووٹنگ کا سلسلہ رات تک جاری رہےگا ۔ ایران میں 59 ملین 3 لاکھ 10 ہزار اور 307 افراد ووٹنگ میں حصہ لینے کے اہل ہیں۔ ایران کے تیرہویں صدارتی انتخابات میں عوام کی سہولت اور بھر پور شرکت کے پیش نظر 72 ہزار پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔ صدارتی انتخابات سے تین امیدوار مہر علیزادہ، علی رضا زاکانی اور سعید جلیلی دستبردار ہوگئے،  دو امیدوارعلی رضا زاکانی اور سعید جلیلی آخری وقت میں  آیت اللہ رئیسی کے حق میں دستبردار ہوگئے اور انھوں نےاپنے حامیوں سے کہا ہے کہ وہ آیت اللہ سید ابراہیم رئیسی کے حق میں اپنا ووٹ استعمال کرکے انھیں کامیاب بنائیں۔ تین امیدواروں کے صدارتی انتخابات سے دستبردار ہوجانے کے بعد اب چار امیدوار سید ابراہیم رئيسی ، محسن رضائی ، قاضی زادہ ہاشمی اور عبدالناصر ہمتی صدارتی میدان میں موجود ہیں اور ایرانی عوام آج بروز جمعہ 18 جون کو  ان میں سے کسی ایک کی قسمت کا فیصلہ کرکے اسے آئندہ چار سال کے لئے ایران کے صدر کے عنوان سے منتخب کریں گے۔

ایرانی عوام کی انتخابات میں تاریخی، بےمثال اور ولولہ انگیز شرکت ایران کی سربلندی کا مظہر

News Code 1906999

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 8 =