ایران کومشترکہ ایٹمی معاہدے اور پابندیاں اٹھانے سے کوئی فائدہ نہیں ہوا

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی پانچویں سالگرہ کے موقع پرایک بیان میں کہا ہے کہ ایران کومشترکہ ایٹمی معاہدے اور پابندیاں اٹھانے سے کوئی فائدہ نہیں ہوا ہےنیز مشترکہ ایٹمی معاہدے کا کوئي متبادل نہیں ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی پانچویں سالگرہ کے موقع پرایک بیان میں کہا ہے کہ ایران کومشترکہ ایٹمی معاہدے اور پابندیاں اٹھانے سے کوئی فائدہ نہیں ہوا ،نیز مشترکہ ایٹمی معاہدے کا کوئي متبادل نہیں ہے۔

ایرانی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مشترکہ ایٹمی معاہدہ گروپ 1+5 اور ایران کے درمیان طویل مذاکرات کے نتیجے میں وجود میں آیا ۔ یہ ایک متوازن معاہدہ تھا اور سکیورٹی کونسل نے بھی قرارداد 2231 کے ذریعہ اس معاہدے کی توثیق اور حمایت کی۔ لیکن امریکہ نے یکطرفہ طور پر اس معاہدے سے خارج ہوکر عالمی برادری کے اس منطقی اقدام کو خطرے میں ڈال دیا ۔

ایرانی وزارت خارجہ کے بیان کے مطابق مشترکہ ایٹمی معاہدے میں باقی رہنے والے ارکان نے بھی ایران کو اقتصادی فوائد اور مراعات سے محروم  رکھا ہے گویا انھوں نے معاہدے میں رہ کر اس معاہدے پر عمل نہیں کیا۔ اورانھوں نے  امریکہ کے یکطرفہ اور غیر ققانونی اقدام کا مقابلہ کرنے کے لئے کوئی اقدام نہیں کیا۔

ایرانی وزارت خارجہ کے بیان کے مطابق  سکیورٹی کونسل کی قرارداد کے مطابق ایران کے خلاف تمام پابندیوں کا خاتمہ ہونا چاہیے اور لیکن مشترکہ ایٹمی معاہدے میں موجود ارکان نے بھی معاہدے پر عمل در آمد نہیں کیا جبکہ ایران نے مشترکہ ایٹمی معاہدے میں کئے گئے اپنے تمام وعدوں کو عملی جامہ پہنا دیا ہے۔

واضح رہے کہ ایران اورگروپ  5+1  یعنی فرانس، برطانیہ ، امریکہ، چين ، روس اور جرمنی کے درمیان 14 جولائی 2015 کو ایک معاہدہ ہوا تھا، جس کے تحت ایران کو محدود پیمانے پر پرامن جوہری پروگرام جاری رکھنے کی اجازت دی گئي تھی اورجوہری پروگرام کو آگے نہ بڑھانے کے بدلے میں ایران کو مراعات دینے کا وعدہ کیا گيا تھا ۔ اس معاہدے کی تصدیق اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل نے قرارداد نمبر 2231 کے ذریعے کی تھی لیکن امریکہ اس معاہدے سے خارج ہوگیا جبکہ دیگر ممالک نے بھی ایران کو کوئی اقتصادی فائدہ نہیں پہنچایا۔

News Code 1901595

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 5 =