سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں 7 طلاقیں / یومیہ 168 طلاقیں

سعودی عرب میں طلاق کا رجحان گزشتہ سال کے مقابلے میں بڑھ گیا ہے اس وقت سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں 7 جبکہ یومیہ 168 طلاقیں ہو رہی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الاخبار کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب میں طلاق کا رجحان گزشتہ سال کے مقابلے میں بڑھ گیا ہے اس وقت سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں 7 جبکہ یومیہ 168 طلاقیں ہو رہی ہیں۔ سعودی عرب میں کیے جانے والے تازہ سروے کے مطابق اس وقت سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں 7 جبکہ یومیہ 168 طلاقیں ہو رہی ہیں۔

اس سے قبل اگست 2019 میں کیے گئے ایک سروے سے معلوم ہوا تھا کہ سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں 5 طلاقیں ہو رہی ہیں۔ سروے میں یہ حیران کن انکشاف بھی کیا گیا تھا کہ بے جوڑ شادیوں کی وجہ سے بھی سعودی عرب میں 54 فیصد طلاقیں ہوتی ہیں اور زیادہ تر نوجوان جوڑے ہی اس عمل میں پیش پیش ہیں۔ سروے میں بتایا گیا تھا کہ 81 فیصد طلاقیں شوہر یا بیوی کے اہل خانہ کی جانب سے جوڑے کی ذاتی زندگی میں مداخلت کی وجہ سے ہوتی ہیں۔

سروے میں شوہر اور بیوی کے درمیان مناسب پیار، بات چیت نہ ہونے اور ایک دوسرے کے جذبات کا احترام نہ کرنے کو بھی طلاق کی ایک بڑی وجہ بتایا گیا تھا۔

تاہم اب تازہ سروے میں بتایا گیا ہے کہ سعودی عرب میں محض 6 ماہ کے اندر طلاق کی شرح میں مزید اضافہ ہوگیا ہے اور اب وہاں ہر گھنٹے میں 7 طلاقیں ہونے لگی ہیں۔

News Code 1897472

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 2 =