امریکی کانگریس میں ایغور مسلمانوں کی حمایت اور چینی حکام پر پابندی کا بل منظور

امریکی کانگریس میں ایغور مسلمانوں کیساتھ ناروا سلوک میں ملوث چینی حکام پر پابندی عائد کرنے کا بل کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی کانگریس میں ایغور مسلمانوں کیساتھ ناروا سلوک میں ملوث چینی حکام پر پابندی عائد کرنے کا بل کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا ہے۔ 

اطلاعات کے مطابق امریکی کانگریس میں چند چینی حکام پر سفری اور اقتصادی پابندیاں عائد کرنے کیلیے ایک بل دی ایغور ایکٹ 2019 پیش کیا گیا جس میں چینی صوبے سنکیانگ میں مسلم اقلیت کے ساتھ ناروا سلوک کی مذمت کرتے ہوئے چین کے کچھ سینیئر حکام اور کمیونسٹ پارٹی کے بعض ارکان پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

بل کے حق میں  407 ارکان نے ووٹ دیا اور صرف  ریپبلکن کے ایک رکن تھامس میسی نے مخالفت میں ووٹ دیا۔  بل صدر ٹرمپ کے پاس دستخط کیلیے بھیجا جائے گا جس کے بعد ہی بل پر عمل درآمد ممکن ہوسکے گا۔ قبل ازیں صدر ٹرمپ نے بھی ایغور مسلمانوں کو جبری حراست میں رکھنے کی  مذمت کی تھی۔

News Code 1895937

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 3 =