بھارتی حکومت نے مسلمانوں کے لئے حراستی کیمپ کر تیارکرلئے

بھارتی حکومت نے آسام میں اپنی شہریت ثابت نہ کرنے والےمسلمانوں کو حراستی کیمپ میں منتقل کرنے کی تیاریاں کردی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرزکے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی حکومت نے آسام میں اپنی شہریت ثابت نہ کرنے والےمسلمانوں کو حراستی کیمپ میں منتقل کرنے کی تیاریاں کرلی ہیں۔ مودی سرکار نے غیر قانونی قرار دیئے گئے ریاست آسام کے 19 لاکھ مسلمانوں کے لیے 10 حراستی کیمپوں کی تعمیر شروع کردی ہے۔ برطانوی ذرائع کے مطابق آسام میں بھارتی حکومت بڑے پیمانے پر حراستی کیمپ قائم کر رہی ہے۔جہاں غیر قانونی قرار دیئے گئے مسلمانوں کو منتقل کیا جائے گا۔

نیشنل رجسٹرآف سٹیزن کی لسٹ میں نام نہ آنے والے 19 لاکھ مسلمانوں کو شہریت ثابت کرنے کیلئے 120 دن کی مہلت دی گئی تھی۔ذرائع کے مطابق مودی سرکار این آر سی کے ذریعہ آسام کی بڑی مسلم آبادی کو نشانہ بنانا چاہتی ہے ۔ادھر اقوام متحدہ اور دیگر عالمی گروپ بھی آسام میں مسلمان پناہ گزینوں کی صورتحال پر اپنے خدشات کا اظہار کرچکے ہیں۔

News Code 1893713

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =