امریکی خاتون کا تین بیٹوں کو قتل کرنے کا اعتراف

ایک امریکی خاتون نے گزشتہ 13 ماہ کے دوران مختلف اوقات میں اپنے تین بیٹوں کو قتل کرنے کا اعتراف کرلیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ایک امریکی خاتون نے گزشتہ 13 ماہ کے دوران مختلف اوقات میں اپنے تین بیٹوں کو قتل کرنے کا اعتراف کرلیا ہے۔ اوہایو سے تعلق رکھنے والی بریٹینی پلکنگٹن نامی خاتون نے محض اس لیے اپنے بچوں کو قتل کردیا کیونکہ اس کا شوہر بیٹی کی بجائے لڑکوں پر زیادہ توجہ دیتا تھا۔منگل کو اس خاتون نے پولیس کو فون کرکے بتایا کہ اس کا تین ماہ کا بیٹا نوح سانس نہیں لے رہا۔ پولیس نے اس کی اطلاع ملنے پر فوری طور پر تفتیش شروع کردی کیونکہ یہ اس خاتون کے گھر میں ایسا ہی تیسرا واقعہ تھا۔اس سے پہلے گزشتہ سال جولائی میں تین ماہ کا بچہ نیال کو اس کے باپ جوزف پلکنگٹن نے گھر پر مردہ پایا تھا اور موت کی وجہ کا تعین نہیں ہوسکا تھا۔اسی طرح رواں برس چھ اپریل کو بھی جوزف نے گھر آنے پر اپنے چار سالہ بیٹے کو مردہ دریافت کیا۔ بریٹینی کے اعتراف کے بعد اس پر قتل کی فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس خاتون نے دانستہ طور پر اپنے تین بیٹوں کو قتل کیا۔ رپورٹس کے مطابق بریٹینی نے تینوں بیٹوں کو کمبل میں لپیٹ کر ہلاک کیا جس کی وجہ چار سالہ بیٹی کی بجائے بیٹوں پر شوہر کی توجہ زیادہ ہونا تھی۔

News Code 1857547

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha