غیر ایرانی طلباء آج سعودی سفارتخانہ اورقوام متحدہ کے دفتر پر مظاہرہ کریں گے

ایران میں مقیم غیر ایرانی طلباء بحرین کے مظلوم اور نہتے عوام کی حمایت اور بحرینی و سعودی حکومت کی بربریت و جارحیت کے خلاف آج تہران میں سعودی سفارتخانہ اورقوام متحدہ کے دفتر کے سامنےمظاہرہ کریں گے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق  اسلامی جمہوریہ ایران میں مقیم غیر ایرانی طلباء بحرین کے مظلوم اور نہتے عوام کی حمایت  اور بحرینی و سعودی حکومت کی بربریت و جارحیت کے خلاف آج تہران میں سعودی سفارتخانہ اورقوام متحدہ کے دفتر کے سامنےمظاہرہ کریں گے۔ اطلاعات کے مطابق اس مظاہرے میں نوے ممالک کے طلباء شرکت کریں گے غیر ایرانی طلباء نے بحرین میں سعودی عرب کی فوجی مداخلت کی شدید مذمت کرتے ہوئے فوری طور پر سعودی فوج کے انخلاء کا مطالبہ کیا ہے اور انسانی حقوق کے بین الاقوامی  اداروں پر زور دیا ہے کہ وہ بحرینی عوام کو سعودی جلادوں کے ہاتھ نجات دلانے کے لئے فوری طور پر عملی اقدام کریں ادھرقم میں بحرین کے مدرسہ کے مدیر حجۃ الاسلام عبد اللہ دقاق نے سامراجی طاقتوں اور ان کے ایجنٹوں کی جانب سے بحرینی عوام کے انقلاب کو شیعہ اور سنی انقلاب قراردینے کی سازشوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بحرین کا انقلاب تمام علاقائی انقلابات کی طرح قومی اور عوامی انقلاب ہے اور اس میں شیعہ اور سنی سبھی شریک ہیں  کیونکہ شیعہ اور سنی ، امریکہ نواز تمام عرب ڈکٹیٹر حکمرانوں کے خلاف ہیں اور سب جانتے ہیں کہ آل خلیفہ اور آل سعود امریکہ اور اسرائیل نواز ہیں۔ انھوں نے کہا کہ بحرینی حکومت جرائم پیشہ اور عیاش حکومت ہے اور آل سعود خاندان بھی جرائم پیشہ اور عیاش خاندان ہے ان کو اسلام اور مسلمانوں کی  کوئی فکر نہیں ہے آل خلیفہ اور  آل سعود نے تیل کے ذخائر کے منہ امریکہ اور مغربی ممالک پر کھول رکھے ہیں اور اسی لئے امریکہ سعودی عرب اور بحرین میں جمہوری حکومت کی حمایت نہیں کرتا بلکہ یہاں اپنے عرب ڈکٹیٹروں کی حمایت کررہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ سعودی فوج کی بحرین میں وہی رفتار ہے جو اسرائیل کی فلسطین اور غزہ میں ہے سعودی فوجیوں نے بحرین میں مسجدوں کو منہدم کیا ہے مسجدوں میں قرآن کریم کی بے حرمتی کی ہے لوگوں کو ایذائیں پہنچا رہے ہیں ناموس پر حملے کررہے ہیں انھوں نے کہا کہ سعودی فوجیوں کو کوئی بھی مسلمان فوجی نہیں کہہ سکتا کیونکہ ان کے وحشیانہ جرائم بیان سے باہر ہیں  وہ بحرینی جوانوں کے سروں اور سینوں پر گولیاں چلا رہے ہیں مسجدوں کو گرا رہے ہیں مقدس مقامات کی توہین اور بے حرمتی کررہے ہیں دقاق نے کہا کہ بحرینی اور سعودی حکومت ملکر بحرین میں عوام کا قتل عام کررہی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ حکومت عوام کو ذلیل و رسوا کرنا چاہتی ہے لیکن عوام نے بھی اپنے خون کے آخری قطرے تک  جمہوریت اور انسانیت کے لئے لڑنے کا عزم کررکھا ہے انھوں نے کہا کہ جمہوریت ہمارا بنیادی حق ہے اور بحرینی عوام اپنے بنیادی حق کے لئے لڑ رہے ہیں۔ اور ہماری اس لڑائی میں سنی بھی ہمارے ساتھ ہیں کیونکہ یہ لڑائی مذہبی نہیں بلکہ سیاسی لڑائی ہے اور اس سیاسی لڑائی میں شیعہ اور سنی متحد ہیں البتہ امریکہ اور اس کے ایجنٹ بحرین میں عوامی جمہوری مطالبہ کو مذہبی رنگ دینے کی کوشش کررہے ہیں اور اللہ تعالی ان کی ان کوششوں کو ناکام بنادےگا۔

News Code 1283833

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 1 =