بھارت میں کورونا کی نئی لہر، الرٹ جاری/دہلی میں ہنگامی اجلاس طلب

بھارت پر کورونا کا خطرہ پھر منڈلانے لگا ہے اور دہلی میں کورونا وائرس کے ایک مریض کی موت ہو گئی ہے، جس کے بعد وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے ہنگامی اجلاس طلب کر لیا ہے

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی میڈیا سے نقل کیاہےکہ چین سمیت دنیا کے کئی حصوں میں تباہی مچانے والے کورونا کا سایہ ہندوستان پر بھی منڈلانے لگا ہے۔ چین میں تباہی پھیلانے والے کورونا کے اومیکرون ویرینٹ بی ایف.7 کے چار کیسز ملک میں رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس دوران ملک بھر میں الرٹ جاری کر دیا گیا ہے۔ نئی دہلی میں کورونا وائرس کے ایک مریض کی موت ہو گئی ہے اور دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے ہنگامی اجلاس طلب کر لیا ہے۔

حکومتی ہیلتھ ریلیز کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران دہلی میں کورونا کے 5 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ ایک مریض کی جان چلی گئی۔ دریں اثنا، شہر میں کووڈ کی پازیٹوٹی کی شرح 0.19 فیصد ریکارڈ کی گئی ہے۔ تاہم، ایکٹو کیسز کی کل تعداد 27 ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 8 کورونا کے مریضوں کے صحت یاب ہونے کے بعد صحت یاب ہونے والوں کی کل تعداد 1980555 تک پہنچ گئی ہے۔ خانگی قرنطینہ میں زیر علاج مریضوں کی تعداد 19 ہے۔

نئے کورونا کیسز کے ساتھ شہر میں کیسز کی کل تعداد 2007102 ہو گئی ہے، جبکہ مرنے والوں کی تعداد اب 26520 ہو گئی ہے۔ دوسری جانب ہندوستاسن میں اومیکرون ویرینٹ کے سب ویرینٹ بی ایف7 کا پہلا کیس بھی پایا گیا ہے، جس نے پورے چین میں تہلکہ مچایا ہوا ہے۔ ہندوستان میں گجرات کے وڈودرا میں بی ایف7 کا ایک کیس رپورٹ ہوا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ 9 نومبر کو ملک آنے والی ایک غیر مقیم ہندوستانی خاتون اس سب ویرینٹ سے متاثر پائی گئی ہے۔ اس کا نمونہ فوری طور پر جینوم سیکونسنگ کے لیے بھیج دیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ گجرات میں اس طرح کے دو اور کیسز سامنے آئے ہیں جن کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ یہ بی ایف 7 بھی ہو سکتے ہیں تاہم ابھی تک اس کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔ ان کے نمونے بھی جانچ کے لیے بھیجے گئے ہیں۔

News Code 1913779

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha