ترکی کے پاس ایرانی تیل کے علاوہ کوئی دوسرا آپشن نہیں

ترکی کے وزير خارجہ نے امریکہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کے پاس ایرانی تیل کے علاوہ کوئی دوسرا آپشن نہیں ہے لہذا امریکہ کو ایرانی تیل پر پابندی عائد کرنے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنی چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترکی کے وزير خارجہ مولود چاوش اوغلو  نے امریکہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کے پاس ایرانی تیل کے علاوہ کوئی دوسرا آپشن نہیں ہے لہذا امریکہ کو ایرانی تیل پر پابندی عائد کرنے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنی چاہیے۔

ترک وزير خارجہ نے کہا کہ ترکی کی تیل کی ریفائنریوں ميں تیل کے تصفیہ کے لئےمناسب وسائل نہیں ہیں اور ترکی کے پاس ایرانی تیل کے علاوہ کوئی دوسرا آپشن بھی نہیں ہے۔ اس سے قبل امریکہ نے دھمکی دی تھی کہ 2 مئی کو ایران سے تیل خریدنے والے چھ  ممالک کے استثنی کو ختم  کردیا جائےگا اور ان کی مدت میں مزید توسیع نہیں کی جائےگی ، امریکہ کے اس غیر قانونی فیصلے کو عالمی مزاحمت کا سامنا ہے۔

News Code 1890200

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 3 =