طالبان ممکنہ طور پر افغانستان پر قبضہ کرسکتے ہیں

امریکی وزیر دفاع جنرل لائڈ آسٹن اور جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک ملی نے ایک بریفنگ میں کہا ہے کہ ممکن ہے طالبان افغانستان پر قبضہ کر لیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی وزیر دفاع جنرل لائڈ آسٹن اور جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک ملی نے ایک بریفنگ میں کہا ہے کہ ممکن ہے طالبان افغانستان پر قبضہ کر لیں۔

امریکی وزیر دفاع نے کہا کہ ہو سکتا ہے کہ مذاکرات سے سیاسی حل نکل آئے،افغانستان کی فضائی نگرانی جاری رہے گی، جس کا مقصد افغانستان سے شدت پسندی اور تشدد  روکنا ہے۔

جنرل لائڈ آسٹن اور جنرل مارک ملی نے مزید کہا کہ امریکہ کے پاس فضائی حملے کرنے کی صلاحیت موجود رہے گی۔

انہوں نے کہا کہ کابل سے باہر افغانستان میں موجود تمام امریکی اڈوں کو افغان وزارت دفاع کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ امریکہ نے افغانستان سے انخلا کے موقع پر بھاری مقدار میں جنگی ساز و سامان طالبان کو فراہم کردیا  اور انھیں افغانستان پر قبضہ کے سلسلے میں  ہری جھنڈی دکھا دی ، جس کے بعد افغانستان میں طالبان کے حملوں میں تیزی آگئی ہے۔

News Code 1907465

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 8 =