مقتول صحافی جمال خاشقجی کی منگیتر کا سعودی ولیعہد کو سزا دینے کا مطالبہ

مقتول صحافی جمال خاشقجی کی ترک منگیتر خدیجہ چنگیز نے کہا ہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو سزا دی جانی چاہیے کیوں کہ امریکی انٹیلیجنس رپورٹ میں ان پر قتل ثابت ہوگیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مقتول صحافی جمال خاشقجی کی ترک منگیتر خدیجہ نے کہا ہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو سزا دی جانی چاہیے کیوں کہ امریکی انٹیلیجنس رپورٹ میں ان پر قتل ثابت ہوگیا ہے۔ خیال رہے کہ جمال خاشقجی سعودی صحافی تھے جو امریکی روزنامہ واشنگٹن پوسٹ میں سعودی عرب کے خلاف تنقیدی مضامین لکھتے تھے۔

رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق جمال خاشقجی کو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی ایک ٹیم نے ترکی کے شہر استنبول میں قائم سعودی سفارتخانے میں قتل کر کے لاش کے ٹکڑے کردیے تھے۔

اس حوالے سے جمعے کے روز ایک امریکی انٹیلی جنس رپورٹ جاری کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ سعودی ولیعہد محمد بن سلمان نے جمال خاشقجی کے قتل کا حکم دیا تھا۔

مقتول صحافی جمال خاشقجی کی منگیتر کا کہنا تھا کہ " صدر بائیڈن اور دنیا کے تمام سربراہان کا اپنے آپ سے یہ پوچھنا اہم ہے کہ کیا وہ ایک ایسے شخص سے ہاتھ ملانا پسند کریں گے جو قاتل ثابت ہوگیا ہو"۔

واضح رہے کہ 2 اکتوبر 2018 کو استنبول میں سعودی قونصل خانے میں صحافی جمال خاشقجی کو ولیعہد محمد بن سلمان کے ایجنٹوں نے بے رحمی اور بے دردی کے ساتھ قتل کردیا تھا اور سعودی رعب نے آج تک خاشقجی کی لاش کو ان کے ورثاء کے حوالے نہیں کیا ہے۔ سعودی عرب ولیعہد محمد بن سلمان کو اس کیس سے باہر کرنے کے لئے اب تک اربوں ڈالر رشوت کے طور پر خرچ کرچکا ہے۔

News Code 1905501

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 8 =