سعودیہ کو حجاج کی تکریم اور سکیورٹی پر توجہ مبذول کرنی چاہیے/ دشمن گھٹنے ٹیکنے پر مجبور ہوجائےگا

رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے ایرانی حجاج کے سرپرست اور حج اہلکاروں کے ساتھ ملاقات میں حج کو ایک سیاسی ، عبادی اور دینی فریضہ قراردیتے ہوئے فرمایا: حج مسلمانوں کے باہمی اتحاد اور یکجہتی کا بہترین مظہر ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای سے آج حج کے امور میں ولی فقیہ کےنمائندے اور حج  اہلکاروں نے ملاقات کی ۔ یہ ملاقات ہر سال حجاج بیت اللہ الحرام کے سرزمین وحی پر روانہ ہونے سے قبل انجام پذیر ہوتی ہے۔ رہبر معظم انقلاب اسلامی نے ایرانی حجاج کے سرپرست اور حج اہلکاروں کے ساتھ ملاقات میں حج کو ایک سیاسی ، عبادی اور دینی فریضہ قراردیتے ہوئے فرمایا: حج مسلمانوں کے باہمی اتحاد اور یکجہتی کا بہترین مظہر ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: آج امریکہ کی اسلام اور مسلمانوں کے ساتھ دشمنی واضح اور نمایاں ہے اگر آپ حج کے موسم میں امریکہ کی  دشمنی کو مسلمانوں کے سامنے بیان نہیں کریں  تو پھر کہاں بیان کریں گے۔ رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: جن لوگوں کے پاس حج کے انتظامی امور ہیں انھیں حجاج بیت اللہ الحرام کے ساتھ اسلامی اور انسانی رفتار سے پیش آنا چاہیے۔ اور اللہ تعالی کے مہمانوں کی تعظيم اور تکریم کرنی چاہیے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے حجاج بیت اللہ الحرام کی سکیورٹی اور سلامتی کے سلسلے میں سعودی عرب کے حکام کی اہم اور سنگین ذمہ د اری کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: حجاج کو بھی اس معنوی فرصت سے بھر پور استفادہ کرنا چاہیے اور حج ابراہیمی کو اس کی شان کے مطابق بجالانا چاہیے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: حج ایک عبادی سیاسی اجتماع ہے جو مسلمانوں کی قدرت ، طاقت اور اتحاد کا مظہر ہے ، حج کے موقع پر فلسطینیوں اور یمنی مسلمانوں کی حمایت اور مشرکین سے برائت حج کا سیاسی پہلو ہے اور مشرکین سے برائت مسلمانوں کا دینی اور مذہبی فریضہ ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے حج کو مسلمانوں کے درمیان محبت، الفت اور برادری کے فروغ میں اہم قراردیتے ہوئے فرمایا: حج کے دوران دوسرے ممالک کے ساتھ اچھی اور بہرتین رفتار سے پیش آنا چاہیے۔ رہبر معظم انقلاب اسلامی نے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف دشمن کی معاندانہ پالیسیوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: دشمن ، اسلام اور مسلمانوں کے سامنے گھٹنے ٹیکنے پر مجبور ہوجائےگا۔

News Code 1891861

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 14 =