امریکی سینیٹ میں شٹ ڈاؤن ختم کرنے کا بل مسترد

ڈیموکریٹک اور ریپبلکنز کی جانب سے امریکہ کی تاریخ کے سب سے طویل شٹ ڈاؤن کو ختم کرنے کے لیے پیش کیے گئے 2 بل کو سینیٹ نے مسترد کردیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ڈیموکریٹک اور ریپبلکنز کی جانب سے امریکہ کی تاریخ کے سب سے طویل شٹ ڈاؤن کو ختم کرنے کے لیے پیش کیے گئے 2 بل کو سینیٹ نے مسترد کردیا۔

ریپبلکن قانون سازوں کو بل پر 50 ووٹ حق میں جبکہ 47 مخالفت میں پڑے جبکہ دوسرے بل کے لیے 52 حق میں 44 مخالفت میں ووٹ ملے۔ واضح رہے کہ سینیٹ میں بل کو پاس ہونے کے لیے 60 ووٹ درکار تھے۔ رپورٹ کے مطابق اگر یہ بل سینیٹ میں پاس ہوجاتے تو 8 فروری تک حکومتی ادارے بحال ہوتے تاہم اس کے مسترد ہونے کے ساتھ یہ شٹ ڈاؤن مزید عرصے تک جاری رہے گا۔

خیال رہے کہ کانگریس نے امریکی صدر کے مطالبے پر دیوار کی تعمیر کے لیے 5 ارب 70 کروڑ ڈالر فنڈز کے اجرا کی منظوری دینے سے انکار کردیا تھا جس کے جواب میں ڈونلڈ ٹرمپ نے حکومتی اداروں کے لیے پیش کیے جانے والے بجٹ پر دستخط کرنے سے انکارکردیا تھا اور اس کی وجہ سے امریکا میں شٹ ڈاؤن کا آغاز ہوگیا تھا، اس صورتحال سے امریکی حکومت کے 8 لاکھ ملازمین متاثر ہورہے ہیں۔

News Code 1887590

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 6 =