اسلام آباد سے ایک اور سرکاری عہدیدار لاپتہ ہوگئے

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس پی) طاہر خان داوڑ کے اغوا اور افغانستان سے اس کی لاش ملنے کے دوسرے ہی روز بعد ایک اور سرکاری عہدیدار کے لاپتہ ہونے کی اطلاعات سامنے آئی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس پی) طاہر خان داوڑ کے اغوا اور افغانستان سے اس کی لاش  ملنے کے دوسرے ہی روز بعد ایک اور سرکاری عہدیدار کے لاپتہ ہونے کی اطلاعات سامنے آئی ہیں۔ پولیس کے مطابق اسلام آباد سے سی ڈی اے کا ڈپٹی ڈائریکٹر ایاز خان گزشتہ روز میلو ڈی میں سی ڈی اے دفتر گئے تھے جہاں سے وہ لاپتہ ہوگئے۔پولیس کے مطابق ایاز خان نے گزشتہ رات اپنے گھر فون کیا کہ لیٹ آؤں گا لیکن گھر نہیں لوٹے۔ پولیس ذرائع کے مطابق میلو ڈی کے گرد نصب سیف سٹی کے کیمرے بھی خراب ہیں، جس کی وجہ سے ان کی مذکورہ علاقے میں نقل حرکت کے حوالے سے تفصیلات حاصل نہیں کی جاسکتیں۔

ادھر پولیس حکام کا کہنا تھا کہ سی ڈی اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر کے اہل خانہ کی جانب سے پولیس کو درخواست موصول ہوگئی ہے، گمشدگی کی درخواست پر رپورٹ درج کرکے تلاش شروع کردی گئی ہے۔

واضح رہے کہ  گزشتہ ماہ اسلام آباد سے ایس پی طاہر خان داوڑ کو اغوا کیا گیا تھا اور کئی روز بعد ان کی تشدد زدہ لاش افغانستان سے برآمد ہوئی تھی، جسے گزشتہ روز افغانستان نے پاکستانی حکام کے حوالے کردیا تھا۔

News Code 1885669

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 0 =