ترکی میں صدر رجب طیب اردوغان کے حامیوں نے ایک فوجی کا سر کاٹ دیا

ترکی میں فوجی بغاوت کو ناکام بنانے کے بعد پرباسفورس پل پرایک فوجی نے اپنے آپ کو سرینڈرکردیا اور صدر اردوغان کے حامیوں نے بڑی بے رحمی اور بے دردی کے ساتھ اس کا سر قلم کردیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے سوشل میڈیا کے حوالے سے قنل کیا ہے کہ ترکی میں فوجی بغاوت کو ناکام بنانے کے بعد پرباسفورس پل پرایک فوجی نے اپنے آپ کو سرینڈرکردیا اور صدر اردوغان کے حامیوں نے بڑی بے رحمی اور بے دردی کے ساتھ اس کا سر قلم کردیا۔ مختلف میڈیا چینلز پر نشر ہونے والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک گروپ نے ایک زخمی فوجی کو گھیرے میں لےکر شدید تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے اس کا سر قلم کرکے اسے عبرت کا نشان بنا دیا۔
سوشل میڈیا پر آنے والی ان کی خون میں لت پت لاش وائرل ہو گئی جب کہ کئی لوگوں نے حکومت کے حامیوں کوتنقیدکا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کے صدر کو داعش دہشت گردوں کی حمایت بھی حاصل رہی ہے۔

News Code 1865565

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha