سعودی عرب نے مساجد سے نماز کی براہ راست نشریات اور اذان پر پابندی عائد کردی

سعودی عرب نے وہابیت کے بجائے اب مغربی ثقافت کو فروغ دینے کا فیصلہ کیا ہے اس سلسلے میں سعودی عرب نے مساجد سے نماز کی براہ راست نشریات اور لاؤڈ اسپیکر پر اذان دینے پر پابندی عائد کردی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العربیہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب نے وہابیت کے بجائے اب مغربی ثقافت کو فروغ دینے کا فیصلہ کیا ہے اس سلسلے میں سعودی عرب نے مساجد سے نماز کی براہ راست نشریات اور لاؤڈ اسپیکر پر اذان دینے پر پابندی عائد کردی ہے۔

عرب ذرائع کے مطابق سعودی عرب کی نام نہاد اسلامی امور کی وزارت کی جانب سے مساجد کو رمضان کی تناظر میں ہدایات جاری کی گئی ہیں جس کے تحت مساجد میں لاؤڈ اسپیکر پر اذان دینے پر پابندی عائد کردی ہے۔ وزارت نے یہ بھی ہدایت کی ہے کہ نماز کے دوران اماموں اور نمازیوں کی فلم بنانے کے لیے مساجد میں کیمروں کے استعمال پر بھی پابندی عائد رہے گي۔

سعودی وزارت اسلامی امور نے ہدایت نامے میں یہ بھی کہا کہ مساجد انتظامیہ کو افطار کرانے کے لیے پہلے منظوری لینا لازمی ہے۔ اسی طرح غیر سرکاری تنظیموں سے بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ مساجد میں نمازیوں کو افطار کرانے کے لیے مساجد کے اماموں سے رجوع کریں۔

اسی طرح افطار پارٹیوں کا انعقاد کرنے والے پرائیویٹ گروپس اور افراد کو بھی میونسپلٹی کی طرف سے لائسنس یافتہ دکانوں سے کھانا خریدنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

News Code 1910289

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =