بھارت کے سابق وزیراعظم کے قاتل کو 32سال سزا پانے کے بعد ضمانت مل گئی

بھارت کے سابق وزیراعظم راجیوگاندھی کے قتل میں ملوث مجرم اے جی پیراویلن 32سال سزا پانے کے بعد ضمانت پر رہا ہوگیا ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت کے سابق وزیراعظم راجیوگاندھی کے قتل میں ملوث مجرم اے جی پیراویلن 32سال سزا پانے کے بعد ضمانت پر رہا ہوگیا ۔ بھارتی سپریم کورٹ نے راجیو گاندھی کے قتل کے مجرم اے جی پیراویلن کو ضمانت دے دی ، عدالت نے ریماکس دیتے ہوئے کہا کہ مجرم پہلے ہی 30 سال سے زیادہ کی سزا کاٹ چکے ہیں، وہ ضمانت کا حقدار ہے۔

سپریم کورٹ کے جسٹس ایل ناگیشورا رائو اور جسٹس بی آر گاوائی پر مشتمل بنچ نے رہائی کا حکم نامہ جاری کیا ،مجرم پیراویلن نے 2016 میں  خصوصی چھٹی کی درخواست دی تھی ،جس میں مدراس ہائی کورٹ کی طرف سے سزا میں کمی کی درخواست پر غور کرنے سے انکار کیا گیا تھا۔ بنچ نے ریماکس دئیے کہ پیراویلن اس وقت پیرول پر ہے اور اس سے پہلے انہیں تین بار پیرول دیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ 2014 میں سپریم کورٹ نے پیراویلن  کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کر دیا گیا تھا ،ملزم اے جی پیراویلن  1991 میں راجیو گاندھی کے قتل سے متعلق کیس میں عمر قید کی سزا پانے والے سات مجرموں میں سے ایک ہیں۔

News Code 1910108

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha