یمن میں ایرانی سفیر نے یمنی عوام کی مظلومیت اور حقانیت کا بھر پور دفاع کیا

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے یمن ميں ایران کے سفیر کی شہادت پر تعزیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن میں ایرانی سفیر شہید حسن ایرلو نے یمنی عوام کی مظلومیت اور حقانیت کے دفاع میں اپنا بھر پورکردار ادا کیا۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے یمن ميں ایران کے سفیر کی شہادت پر تعزیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن میں ایرانی سفیر شہید حسن ایرلو نے یمنی عوام کی مظلومیت اور حقانیت کے دفاع میں اپنا بھر پورکردار ادا کیا۔

حسین امیر عبداللہیان نے اپنے پیغام میں شہید حسن ایرلو کی شہادت پر گہرے دکھ اور غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہید ایرلو نے دفاع مقدس میں بھی نمایاں کارنامے انجام دیئے اور وہ آٹھ سالہ مسلط کردہ جنگ میں کیمیاوی ہتھیاروں کے ذریعہ زخمی بھی ہوگئے تھے۔  شہید حسن ایرلو نے اپنی بابرکت عمر انقلاب اسلامی کی حفاظت اور ترویج میں بسر کی اور انھوں نے اس سلسلے میں گرانقدر خدمات انجام دیں۔ ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ انھیں یمن میں ایرانی سفیر تعینات کیا گیا ، جہاں انھوں نے یمنی عوام کی حقانیت اور مظلومیت کا بھر پور دفاع کیا اور یمن کے مظلوم و ستمدیدہ مسلمان عربوں کی بھر پور حمایت کی۔ ایرانی وزیر خارجہ نے اس موقع پر شہید حسن ایر لو کے اہلخانہ اور پسماندگان کو تعزيت اور تسلیت پیش کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالی شہید حسن ایرلو کو اپنے ساتھی شہداء اور  صلحاء کی صف میں شامل فرمائے۔ واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سعید خطیب زادہ نےآج صبح اعلان کیا تھا کہ یمن میں ایران کے سفیرحسن ایرلو کورونا وائرس میں مبتلا ہونے بعد درجہ شہادت پر فائز ہوگئے ۔ سعید خطیب زادہ نے کہا کہ شہید ایرلو یمن میں کورونا وائرس میں مبتلا ہوئے اور بعض ممالک کے عدم تعاون کی وجہ سے انھیں ایران منتقل کرنے میں تاخیر ہوگئی جس کی وجہ سے شہید ایرلو کو طبی امداد بر وقت نہ مل سکی اور وہ آج صبح تہران کے ایک اسپتال میں درجہ شہادت پر فائز ہوگئے۔

News Code 1909224

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha