ٹوئٹر نے چین، ترکی اور روس کے ہزاروں اکاؤنٹس بلاک کر دیئے

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے چین، ترکی اور روس کے ہزاروں ایسے اکاؤنٹس بلاک کر دیئے جو ٹوئٹر کے مطابق ریاستی اداروں سے منسلک تھے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے ایف پی  کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے چین، ترکی اور روس کے ہزاروں ایسے اکاؤنٹس بلاک کر دیئے جو ٹوئٹر کے مطابق ریاستی اداروں سے منسلک تھے۔ ٹوئٹر کا کہنا ہے کہ ان اکاؤنٹس سے پروپیگنڈہ اور گمراہ کن معلومات پھیلائی جا رہی تھیں اور ان ممالک کی حکومتوں کے ناقدین کو بھی نشانہ بنایا جا رہا تھا۔ ادھر چین نے ٹوئٹر سے کہا ہے کہ اگر وہ گمراہ کن معلومات سے لڑنا چاہتا ہے تو اسے ایسے اکاؤنٹس بند کردینے چاہئیں جو چین کو بدنام کرتے ہیں۔ چین نے دلیل دی کہ وہ خود گمراہ کن معلومات کا سب سے بڑا متاثرہ ملک ہے۔ امریکی سوشل میڈیا کمپنی ٹوئٹر نے جمعہ کو کہا کہ اب تک سب سے بڑا نیٹ ورک انہوں نے چین کا پکڑا ہے جو 23 ہزار 750 اکاؤنٹس پر مشتمل تھا۔ ان اکاؤنٹس سے مسلسل پوسٹس کی جاتی تھیں جبکہ اس نیٹ ورک کو مزید ڈیڑھ لاکھ اکاؤنٹس کی سپورٹ بھی حاصل تھی جن سے ان پوسٹس کو پھیلایا جاتا تھا۔ ʼٹوئٹر کے مطابق ترکی کا نیٹ ورک 7 ہزار 340 اکاؤنٹس پر مشتمل تھا جبکہ روس کے نیٹ ورک میں ایک ہزار 152 اکاؤنٹس شامل تھے۔ اطلاعات  کے مطابق یہ تمام اکاؤنٹس بلاک اور ان پر شائع ہونے والا موادʼٹوئٹر سے حذف کر دیا گیا ہے لیکن اسے کمپنی کے ڈیٹا بیس میں محفوظ رکھا گیا ہے ۔

News Code 1900864

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 6 =