رمضان المبارک نزول قرآن ، بہار قرآن ، عبادت ، بخشش اور مغفرت کا مہینہ ہے

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں حریت کانفرنس کے اعلی رہنما اور انجمن شرعی شیعیان کے سربراہ حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی نے رمضان المبارک کی آمد کے سلسلے میں مہر نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو میں آیات و روایات کے مطابق رمضان المبارک کو نزول قرآن کا مہینہ، قرآن مجید کی بہار کا مہینہ ، عبادت ، بخشش اور مغفرت کا مہینہ قراردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی اردو سروس کے نامہ نگار کے ساتھ گفتگو میں ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں حریت کانفرنس کے اعلی رہنما اور انجمن شرعی شیعیان کے سربراہ حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی نے رمضان المبارک کی آمد کے سلسلے میں گفتگو میں آیات و روایات کے مطابق رمضان المبارک کو نزول قرآن کا مہینہ، قرآن مجید کی تلاوت کی بہار کا مہینہ ، عبادت ، بخشش اور مغفرت کا مہینہ قراردیا ہے۔

مہر نیوز: رمضان المبارک کا مہینہ تمام مہینوں کا سردار مہینہ ہے اس مہینے کی عظمت اور برکت کے بارے میں آپ کچھ روشنی ڈالیں؟

آقا سید حسن: قرآن مجید کی آیات اور پیغمبر اسلام اور آئمہ معصومین علیھم السلام سے منقول روایات کے مطابق رمضان المبارک کا مہینہ نزول قرآن کا مہینہ ہے ۔ قرآن مجید میں اللہ تعالی کا ارشاد ہے کہ " شَهْرُ رَمَضَانَ الَّذِي أُنْزِلَ فِيهِ الْقُرْآنُ هُدًى لِلنَّاسِ وَبَيِّنَاتٍ مِنَ الْهُدَى وَالْفُرْقَانِ فَمَنْ شَهِدَ مِنْكُمُ الشَّهْرَ فَلْيَصُمْهُ " یہ وہ مہینہ ہے جس ميں قرآن مجید نازل ہوا یہ ہدایت کا مہینہ ہے یہ حق و باطل کی پہچان کا مہینہ ہے اور یہ روزہ رکھنے کا مہینہ ہے۔

آقا سید حسن نے کہا کہ میں اس بابرکت مہینے میں دنیا بشریت کے لئے امن و سلامتی کی دعا کرتا ہوں۔ رمضان المبارک کی بے پناہ رحمتوں اور ان ایام مقدس کی عظمت و اہمیت سے ہر مسلمان اچھی طرح واقف ہے یہ مہینہ پروردگار عالم کی رضا اور رحمت و مغفرت سے سرفراز ہونے اور اس کے قہر و غضب سے نجات کی نوید لیکر بندگان خدا کو اپنے کردار و عمل کی اصلاح کی طرف متوجہ کرتا ہے۔

دریائے رحمت الٰہی بذات خود اس ماہ مبارک میں تشنگان رحمت کو تلاش کرتا ہے اور ہر نیک عمل کے اجر و ثواب میں ستر گناکا اضافہ کیا جاتا ہے بلکہ روزہ دار کی نیند بھی عبادت الٰہی میں شمار کی جاتی ہے یہ دعاؤں کی استجابت کا مہینہ ہے خوش نصیب ہے وہ مسلمان جس نے اس ماہ مقدس کی عظمت و اہمیت کو سمجھ کر اس کا شایان شان استقبال کرکے اپنے خالق حقیقی کے احکامات پر عمل کیا۔  ماہ رمضان میں تزکیہ نفس اور صبر و استقامت کا مہینہ ہے۔

انجمن شرعی شیعیان کے صدر نے کورونا وائرس سے متعلق مہر نیوز کے نامہ نگار کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت پوری دنیا اس مہلک کورونا وائرس  کی لپیٹ میں ہے اس مہلک وائرس کی وجہ سے اب تک ہزاروں افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جبکہ ڈھائی ملین سے زائد افراد اس مہلک وباء میںم بتلا ہوچکے ہیں۔ انسان آج سخت آزمائش اور امتحان کے مرحلے سے گزر رہا ہے۔ انسانی ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے کرہ ارض پر روز مرہ کی زندگی تھم کر رہ گئی ہے اس ہلاکت خیز وباء کے علاج اور دوا سازی کے امکانات ابھی تک معدوم نظر آرہے ہے فی الوقت دنیا بھر کے طبی ماہرین کو احتیاطی تدابیر کے سوا اس آفت کا کوئی دوسرا علاج نظر نہیں آرہا ہے تمام اہل عقل و دانش، علمائے اسلام،حکومتی قیادتیں اور مفکرین اس رائے سے متفق ہیں کہ احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل پیرا ہو کر ہی عالم انسانیت کو موجودہ مہلک صورت حال سے بچایا جاسکتا ہے اس سلسلے میں سماجی فاصلوں کو برقرار رکھنا اور تمام چھوٹے بڑے اجتماعات سے مکمل طور پر اجتناب انتہائی ناگزیر بن چکا ہے۔

آقا سید حسن نے کہا کہ ایسی صورت حال میں ماہ مبارک کے دوران اجتماعی اعمال و عبادات کی سعادت سے محرومی ایک فطری امر ہے دین اسلام امن و سلامتی اور بقائے انسانیت کا دین ہے جو انسانی جانوں کی حفاظت کو اولین ترجیح دیتا ہے ہر وہ عمل جس سے انسانیت کے وجود و بقا کو خطرہ لاحق ہو شریعت کی نگاہ میں ممنوع ہے اور ہر وہ عمل جو نوع انسانیت کی سلامتی کے لئے ناگزیر ہو سب سے بڑی عبادت اور دینی فریضہ ہے موجودہ صورت حال کے تناظر میں مراجع عظام رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیۃ اللہ العظمی خامنہ ای  اور حضرت آیۃ اللہ العظمیٰ سید علی سیستانی نے بھی واضح احکامات اور ہدایات جاری کئے ہیں جو ہم سب کے لئے فتوے کی حثیت رکھتے ہیں ان مرا جع کرام کی طرف سے جاری کئے گئے رہنما خطوط پر من و عن عمل کیا جانا چاہیے۔

حریت رہنما نے کہا کہ مسلمانوں کو چاہیے کہ وہ رمضان المبارک کے اعمال و عبادات اپنے گھروں میں رہ کر انجام دیں اور اللہ  تعالیٰ کی بارگاہ میں دنیاے بشریت کی امن و سلامتی اور موجودہ مہلک وباء سے نجات کے لئے خصوصی دعائیں کریں۔

 انشااللہ ہم پھر اجتماعی عبادت کی سعادتوں سے سر فراز ہوں گے مساجد و امام بارگاہوں کی رونقیں پھر بحال ہوں گی مقدس مقامات کی زیارات کے نورانی مناظر پھر ہمارے قلب و روح کو منور کریں گے موجودہ عالمی وباء کے خلاف جنگ میں نمایاں اور کلیدی کردار ادا کرنے والے ڈاکٹروں  اور طبی عملے کے تمام افراد اور دیگر اداروں بالخصوص WHOکی خدمات ناقابل فراموش ہیں اللہ تعالیٰ ان سب لوگوں کو اپنے حفظ امان میں رکھے اور انکی توفیقات میں اضافہ کرے اورانھیں اجر عظیم عطا فرمائے۔

آقا سید حسن نے ایران میں کورونا وائرس کی روک تھام اور ایرانی عوام کے کردار کے بارے میں مہر نیوز کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ میں ایران میں کورونا وائرس سے جاں بحق ہونے والے افراد کے سلسلے میں رہبر معظم انقلاب اسلامی ، ایرانی حکومت ، عوام اور جاں بحق ہونے والے افراد کے اہلخانہ کے ساتھ ہمدردی اور انھیں تعزيت اور تسلیت پیش کرتا ہوں۔ ایرانی عوام نے کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے سلسلے میں شاندار کردار اور رفتار کا مظاہرہ کیا اور حکومتی اور غیر حکومتی اداروں نے ملکر کر کورونا وائرس کو کنٹرول کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے جو دنیائے بشریت کے لئے بھی نمونہ عمل ہے۔ انھوں نے کہا کہ اللہ تعالی ایرانی قوم اور رہبر معظم انقلاب اسلامی کی حفاظت فرمائے۔

News Code 1899695

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 6 =