پاکستان کی بھارت کی جانب سے کراس ایل اوسی تجارت کی یکطرفہ معطلی کی مذمت

پاکستانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت کی جانب سے کراس ایل اوسی تجارت کی یکطرفہ معطلی کی مذمت کرتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت کی جانب سے کراس ایل اوسی تجارت کی یکطرفہ معطلی کی مذمت کرتا ہے۔ پاکستانی وزارت خارجہ سے جاری ہونے والے بیان میں ترجمان فیصل نے کہا کہ پاکستان سے مشاورت کے بغیر کراس ٹریڈ کی معطلی انتہائی افسوسناک ہے، پاکستان اس یکطرفہ معطلی کی مذمت کرتا ہے جب کہ کشمیر سے متعلق اس سی بی ایم کی یکطرفہ معطلی ظاہر کرتی ہے کہ بھارت پیچھے ہٹنے کی کوشش کررہاہے۔پاکستانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ کراس ایل اوسی تجارت دونوں ملکوں کے درمیان فعال اعتماد سازی کے اقدامات میں سے ایک ہے جو سفارتی کوششوں کے بعد عمل میں لائی گئی، بھارتی ایکشن بے بنیاد الزامات پر مبنی ہے کہ یہ طریقہ کارسمگلنگ ،نارکوٹکس ، جعلی کرنسی اور دہشتگردی کے لئے استعمال کیا جا رہا ہے، پاکستان اس کے غلط استعمال سے متعلق بھارتی الزامات کو مسترد کرتا ہے۔

News Code 1889886

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 7 =