شمالی کوریا کا جوہری پروگرام ایک سال میں غیر مؤثر ہوجائےگا

امریکہ کی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ کی کم جونگ ان سے ملاقات کے بعد شمالی کوریا کا جوہری ہتھیاروں کی تیاری کے پروگرام کا بیشتر حصہ ایک سال کے اندر اندر عملی طور پر غیر موثر ہو جائے گا ۔

مہر خـبررساں ایجنسی نے امریکی ٹی وی سی  بی ایس  کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ کی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ کی کم جونگ ان سے ملاقات کے بعد شمالی کوریا کا جوہری ہتھیاروں کی تیاری کے پروگرام کا بیشتر حصہ ایک سال کے اندر اندر عملی طور پر غیر موثر ہو جائے گا ۔

اطلاعات کے مطابق امریکہ کی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے مقامی ٹی وی سی بی ایس نیوز کو دیئے گئے اپنے انٹرویو میں اس یقین کا اظہار کیا ہے کہ امریکا کی ماہر ٹیم کے زیر نگرانی شمالی کوریا کے جوہری، کیمیائی اور حیاتیاتی ہتھیاروں کے پروگرام کو صرف ایک سال کے اندر اندر ختم کیا جاسکتا ہے تاہم اس کے لیے شمالی کوریا کو امریکا سے تعاون کی درخواست کرنا ہوگی۔

جان بولٹن کا مزید کہنا تھا کہ شمالی کوریا اور امریکہ کے درمیان مذاکرات خطے میں پائیدار امن کے لیے انتہائی ضروری تھا جس میں پیشرفت جاری ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان فوجیوں کی باقیات کا بھی تبادلہ ہوا ہے اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو مذاکراتی نکات پر عمل درآمد کی رفتار کا جائزہ لینے کے لیے شمالی کوریا کے حکام سے مستقل رابطے میں ہیں۔

News Code 1881914

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 0 =