تحریک لبیک پاکستان پر عائد پابندی ختم اور کالعدم تنظیموں کی فہرست سے خارج

پاکستانی وزارت داخلہ نے تحریک لبیک پاکستان پر عائد پابندی ختم کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا، اب ٹی ایل پی کے ساتھ لفظ کالعدم نہیں لکھا جائے گا جب کہ وہ اپنی سرگرمیاں بھی جاری رکھ سکے گی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکسپریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی وزارت داخلہ نے تحریک لبیک پاکستان پر عائد پابندی ختم کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا، اب ٹی ایل پی کے ساتھ لفظ کالعدم نہیں لکھا جائے گا جب کہ وہ اپنی سرگرمیاں بھی جاری رکھ سکے گی۔ اطلاعات کے مطابق پنجاب حکومت نے تحریک لبیک کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ واپس لینے کی سفارشات تیار کرکے وزارت داخلہ کو ارسال کی تھیں، وزارت داخلہ نے یہ سمری وفاقی کابینہ کو ارسال کی جسے کابینہ نے منظور کرلیا تھا، اب وزارت داخلہ نے ٹی ایل پی سے پابندی ختم ہونے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا ہے۔

پابندی کا یہ خاتمہ حکومت اور ٹی ایل پی کے درمیان ہونے والے معاہدے کے باعث ہوسکا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت نے معاہدے کے تمام نکات پر عمل درآمد کرلیا ہے، تحریک لبیک کے 577 کارکنوں کے نام فورتھ شیڈول سے نکال دیئے ہیں اور تحریک لبیک کے 2100 سے زائد گرفتار کارکنوں کو رہا کردیا ہے جب کہ پنجاب حکومت ٹی ایل پی کے کارکنوں پر قائم مقدمات کے حوالے سے عدالتوں میں نرم رویہ اختیار کرے گی۔

ذرائع کے مطابق تحریک لبیک نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ احتجاجی رویہ تبدیل کرے گی اور پارٹی کی سیاسی سرگرمیاں شروع کرے گی۔

واضح رہے کہ تحریک لبیک پاکستان " ٹی ایل پی " کو پنجاب حکومت کی درخواست پر 15 اپریل کو کالعدم جماعتوں کی فہرست میں شامل کیا گیا تھا۔

News Code 1908767

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 3 =