پاکستان میں لڑکوں سے زیادہ لڑکیاں منشیات کے استعمال میں ملوث

پاکستان کے وزیر نارکوٹکس کنٹرول سینیٹراعظم سواتی نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستان میں لڑکوں سے زیادہ لڑکیاں منشیات استعمال کر رہی ہیں۔

 مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے وزیر نارکوٹکس کنٹرول سینیٹراعظم سواتی نے انکشاف کیا ہے کہ  پاکستان میں لڑکوں سے زیادہ لڑکیاں منشیات استعمال کر رہی ہیں۔ منشیات سے متعلق کراچی سب سے زیادہ خطرناک شہر قرار دیا گیا ہے۔ 30 سال سے کم عمر کے 65 فیصد طلبہ منشیات استعمال کر رہے ہیں۔

میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئےانہوں نے انکشاف کیا کہ کراچی کے تعلیمی اداروں میں سب سے زیادہ منشیات کا استعمال کیا جاتا ہے۔

 ملک بھر میں بچے اور بچیاں منشیات کی عادی ہیں، 30 سال سے کم عمر کے 65 فیصد طلباء اور طالبات منشیات استعمال کر رہے ہیں، لڑکیوں کی زیادہ تعداد یونیورسٹیز میں منشیات کا استعمال کر رہی ہیں۔

 تعلیمی اداروں میں آئس اور سینتھٹک کا استعمال زیادہ ہو رہا ہے، ٹافیز اور کھانے کی ہر چیز میں منشیات ڈال کر استعمال کی جا رہی ہے۔ حکومت تعلیمی اداروں میں منشیات کی روک تھام کیلئے نئی ڈرگ پالیسی لا رہی ہے۔

اس نے کہا کہ پاکستان میں 90 فیصد سے زیادہ منشیات افغانستان سے آرہی ہیں جس کی وجہ سے پاک افغان بارڈرز کو کنٹرول کرنا ناگزیر ہے۔

News Code 1904012

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 5 =