پاکستان میں تعینات غیر ملکی سفیروں کا لائن آف کنٹرول کا دورہ

پاکستان میں تعینات غیر ملکی سفیروں نے لائن آف کنٹرول کا دورہ کیا جبکہ بھارتی سفارتی نمائندوں نے اس دورے میں شرکت نہیں کی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں تعینات غیر ملکی سفیروں نے لائن آف کنٹرول کا دورہ کیا جبکہ بھارتی سفارتی نمائندوں نے اس دورے میں شرکت نہیں کی۔ اطلاعات کے مطابق پاکستانی وزارت خارجہ کی جانب سے اس دورے کا اہتمام کیا گیا تاکہ آزاد کشمیر میں دہشت گردوں کے اڈے تباہ کرنے کے بھارتی دعوے کو بے نقاب کیا جاسکے۔ اس موقع پر ترجمان دفتر خارجہ محمد فیصل بھی موجود تھے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے جورا سیکٹر میں غیر ملکی سفیروں کو ایل او سی پر بریفنگ دی اور بھارتی اقدامات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ بھارت مسلسل ایل او سی پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتا ہے اور نہتے شہریوں کو گولہ باری میں نشانہ بناتا ہے۔

 محمد فیصل نے بھارتی آرمی چیف کا یہ دعویٰ مسترد کیا کہ بھارتی فوج کی جانب سے پاکستان میں دہشت گردوں کے 3 لانچنگ پیڈز کو تباہ کیا گیا۔ پاکستانی حکام نے غیر ملکی سفرا کو تمام علاقے کا دورہ کرایا اور دکھایا کہ بھارتی فائرنگ سے آزاد کشمیر میں عام شہریوں کے گھروں اور بازاروں کو کتنا شدید نقصان پہنچ رہا ہے۔

غیرملکی سفرا اور میڈیا کو بھارتی توپخانہ کے گولے، خول اور ٹکڑے دکھائے گئے۔ غیر ملکی سفارتکاروں نے بھارتی گولہ باری سے دکانوں اور گھروں کو پہنچنے والے نقصانات کاجائزہ لیا اور لوگوں سے ملاقات کی۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے غیر ملکی سفرا کو بتایا کہ 2019میں اب تک بھارت نے2608بارجنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی جس کے نتیجے میں  44شہری جاں بحق اور 230 زخمی ہوئے۔

News Code 1894787

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 2 =