شام میں ترکی کی جارحیت جاری/ خاتون سیاستداں سمیت 9 شہری جاں بحق

شام میں ترک فوج کی سنی کردوں کے خلاف بربریت اور جارحیت جاری ہے ترک فوج نے اب تک سیکڑوں کرد فوجیوں کو ہلاک کرنے کا دعوی کیا ہے ترکی کی تازہ بمباری میں ایک خاتون سیاست دان سمیت 9 شہری ہلاک جبکہ لاکھوں افراد نقل مکانی پر مجبور ہوگئے ہیں۔

 مہر خبررساں ایجنسی نے سانا کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ شام میں ترک فوج کی سنی کردوں کے خلاف بربریت اور جارحیت جاری ہے ترک فوج نے اب تک سیکڑوں کرد فوجیوں کو ہلاک کرنے کا دعوی کیا ہے ترکی کی تازہ بمباری میں  ایک خاتون سیاست دان سمیت 9 شہری ہلاک جبکہ لاکھوں افراد نقل مکانی پر مجبور ہوگئے ہیں۔

 اطلاعات کے مطابق شام کے کرد علیحدگی پسندوں کے زیر تسلط سرحدی علاقوں تل ابیض اور راس العین میں ترک فوج کے کردوں کے خلاف " چشمہ امن آپریشن" کو آج پانچواں روز ہے جس کےدوران سرحد کے دونوں اطراف 30  سے زائد شہریوں کی ہلاکت ہوئیں۔ ترک صدر نے اردوغان نے سنی کردوں کے خلاف فوجی آپریشن جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔ترک فوج کی کارروائی اور کردوں کی جانب سے مزاحمت کے باعث علاقہ میدان جنگ بنا ہوا ہے جس کے باعث ایک 20 لاکھ کے بے گھر ہوجانے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے ۔

News Code 1894544

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 3 =