روس کی مسئلہ کشمیر کو سیاسی اور سفارتی طریقہ سے حل کرنے پر تاکید

روس نے پاکستان اور بھارت کے درمیان موجود مسئلہ کشمیر کے حل میں اپنا کردار ادا کرنیکی خواہش ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ روس مسئلہ کشمیر کو سیاسی اور سفارتی طریقہ سے حل کرنے کا خواہاں ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ روس نے پاکستان اور بھارت کے درمیان موجود مسئلہ کشمیر کے حل میں اپنا کردار ادا کرنیکی خواہش ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ روس مسئلہ کشمیر کو سیاسی اور سفارتی طریقہ سے حل کرنے کا خواہاں ہے۔ اطلاعات  کے مطابق روس نے پاکستان اور بھارت کے درمیان موجود مسئلہ کشمیر کے حل میں اپنا کردار ادا کرنیکی خواہش ظاہر کی ہے اور ساتھ ہی واضح کیا ہے کہ اس ضمن میں اس کا کوئی خفیہ ایجنڈا نہیں ہے۔ روس کی جانب سے دونوں ممالک کے درمیان موجود تصفیہ طلب امور میں کردار ادا کرنیکی خواہش اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے بند کمرہ اجلاس کے فوری بعد سامنے آئی ہے، روس اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا مستقل رکن ہے اور ویٹو پاور کا حامل ملک ہے۔ روس کی جانب سے کردار ادا کرنیکی پیشکش اقوام متحدہ میں اس کے مستقل مندوب دمتری پولیانسکی نے ٹوئٹر پر جاری کردہ ایک پیغام میں کی ہے.

دمتری پولیانسکی نے مؤقف اپنایا ہے کہ ہمارا کوئی خفیہ ایجنڈا نہیں ہے، ہم کھلے دل سے پاک بھارت تنازعہ میں کردار ادا کرنا چاہتے ہیں۔ خواہشمند ہیں کہ اسلام آباد اور دہلی مسئلہ کشمیر کو حل کرکے اچھے ہمسایوں کی طرح رہیں، آرزو ہے کہ کشمیر پر موجود اختلافات سیاسی اور سفارتی طریقہ کار سے حل ہوں۔

News Code 1892999

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 11 =