اپوزیشن نے  پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان  معاہدے کو مسترد کردیا

پاکستان میں اپوزیشن جماعتوں نے پاکستانی حکومت اور آئی ایم ایف کے درمیان ہونے والے معاہدے کو مسترد کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں اپوزیشن جماعتوں نے پاکستانی حکومت اور آئی ایم ایف کے درمیان ہونے والے معاہدے کو مسترد کردیا ہے۔ ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کا آئی ایم ایف سے معاہدہ کامیاب ہوگیا، عمران صاحب ایک ہزار ارب کے اضافی ٹیکس لگنے سے مہنگائی کا خوفناک سونامی آئےگا، 6 ارب ڈالر کے لیے ملک کو گروی رکھ دیاگیا ہے۔

پاکستان پیپپلزپارٹی کے رکن خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات کے نتیجے میں اتنی خطرناک مہنگائی ہوگی جو عوام کی برداشت سے باہر ہوگی۔ پاکستان پیپلز پارٹی کی  سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ معاہدے سے لگتا ہے، مہنگائی کی ‘سونامی’ آنے والی ہے، کہیں مہنگائی کی یہ سونامی حکومت کو نہ لے ڈوبے۔

ادھر جماعت اسلامی کے سربراہ سراج الحق کا کہنا ہے کہ حکومت نے ٹیکس لگانے کی آئی ایم ایف کی شرائط کو سرجھکا کر قبول کیا ہے، ان شرائط کے بعد پاکستان کے عوام آئی ایم ایف کےغلام بن جائیں گے جب کہ معاہدے سے بجلی، گیس اورتیل کی قیمت میں اضافہ ہوگا۔

News Code 1890480

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 12 =