امریکہ کی قومی سلامتی کے لیے چین سب سے بڑا خطرہ  بن گیا

امریکی کاؤنٹر انٹیلی جنس اور سکیورٹی سینٹر کے سربراہ بل ایونینا نے کہا ہے کہ امریکہ کی قومی سلامتی کے لیے چین اب روس سے بڑا خطرہ ہو گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بی بی سی  کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی کاؤنٹر انٹیلی جنس اور سکیورٹی سینٹر کے سربراہ بل ایونینا نے کہا ہے کہ امریکہ کی قومی سلامتی کے لیے چین اب روس سے بڑا خطرہ ہو گیا ہے۔  بی بی سی سے گفتگو میں امریکی کاؤنٹر انٹیلی جنس کے سربراہ بل ایونینا نے انکشاف کیا ہے کہ روس کے مقابلے میں چین بڑا خطرہ بنتا جا رہا ہے۔ بل ایونینا نے کہا کہ جون سے اب تک 20 چینی باشندوں اور اداروں پر اقتصادی جاسوسی کی فرد جرم عائد کی گئی ہے جب کہ کئی افراد اور اداروں کے بارے میں ہمیں معلوم ہی نہیں۔ امریکی انٹیلی جنس سربراہ کا مزید کہنا تھا کہ چین کی اقتصادی کامیابی کمرشل رازوں کی چوری پر کھڑی ہے جس کی قیمت امریکی عوام نے چکائی ہے، امریکہ کو اب چین کے باعث نقصان کی جانچ پڑتال کرنا ہوگی۔بل ایونینا نے کہا کہ چین کی امریکی تجارتی رازوں تک رسائی نے مقامی تحقیقی اداروں کی ترقی، جامعات، بزنس کا مالکانہ ڈیٹا اور تجارتی رازوں کی چوری سے کتنے امریکی ملازمتوں سے محروم ہوگئے۔واضح رہے کہ اس سے قبل بھی امریکہ چین کو قومی سلامتی کے لیے خطرہ قرار دے چکا ہے۔

News Code 1886595

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =